بھارت: چور لڑکیوں کاگینگ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP GETTY
Image caption علاقے کے تھانہ انچارج کے مطابق تفتیش جاری ہے لیکن ابھی کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے

بھارت کی راجدھانی دلی کے قریب غازی آباد شہر میں تیرہ لڑکیوں کے ایک گینگ نے ایک پرنٹنگ پریس میں داخل ہو کر چوری کی اور یہ پوری کارروائی سی سی ٹی وی نے قید کر لی۔

یہ حیرت انگیز واقعہ تقریباً دو ہفتے قبل پیش آیا تھا اور اعلی پولیس اہلکاروں نے اس بات کی تصدیق کردی ہے کہ چوری کرنے والا گروہ لڑکیوں پر مشتمل تھا۔

پریس کے مالک ونیت تیاگی کے مطابق سی سی ٹی وی فوٹیج میں لڑکیوں کو بارہ فٹ اونچی دیوار پھلانگ کر پرنٹنگ پریس میں داخل ہوتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔ لڑکیوں کی عمریں 20 سال کے آس پاس بتائی گئی ہیں۔ انھوں نے اپنے منہ دوپٹوں سے ڈھک رکھے تھے۔

مسٹر تیاگی کے مطابق لڑکیاں رات دیر گئے دو تالے توڑ کر پریس میں داخل ہوئیں اور صرف 14 منٹ میں سامان لے کر غائب ہوگئیں۔ مسٹر تیاگی کا پریس غازی آباد کے ایک صنعتی علاقےمیں ہے۔

لڑکیوں کی نظر جب سی سی ٹی وی پر پڑی تو انھوں نے اس کے تار نکال دیے لیکن پریس کے دروازے کے قریب ایک کیمرہ نصب تھا جو ان کی نظروں سے بچ گیا۔

علاقے کے تھانہ انچارج کے مطابق سی سی ٹی وی کا ٹیپ تفتیش کے لیے ماہرین کےسپرد کر دیا گیا ہے لیکن ابھی کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے۔

اسی بارے میں