’ماسٹر مائنڈ‘ کے بالوں پر ترکی میں اشتہار

تصویر کے کاپی رائٹ ap
Image caption ترکی کی کمپنی نے جو تصویر استعمال کی ہے وہ اس وقت کھینچی گئی تھی جب خالد شیخ محمد کو 2003 میں پاکستان سے حراست میں لیا گیا تھا

ترکی کی ایک کمپنی نے غیر ضروری بالوں سے نجات دلانے والی پروڈکٹ کے اشتہار میں نادانستہ طور پر القاعدہ کے رہنما خالد شیخ محمد کی تصویر استعمال کی ہے۔

خالد شیخ محمد کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ستمبر 2001 میں امریکہ پر حملوں کے ماسٹر مائنڈ ہیں۔

ترکی کی کمپنی نے جو تصویر استعمال کی ہے وہ اس وقت کھینچی گئی تھی جب خالد شیخ محمد کو 2003 میں پاکستان سے حراست میں لیا گیا تھا۔

اس تصویر میں خالد شیخ محمد نے سفید بنیان پہن رکھی ہے اور ان کے سینے کے بال صاف نمایاں ہیں۔

ترک کاسمیٹک کمپنی نے اس تصویر کے نیچے لکھا ہے: ’یہ بال خود بخود نہیں جھڑیں گے۔‘

اس کمپنی کا کہنا ہے کہ اس نے اس تصویر کا انتخاب شدت پسندی میں ملوث ہونے پر نہیں بلکہ جسم پر بہت زیادہ بال ہونے کے باعث کیا۔

کمپنی کے ترجمان کا کہنا ہے: ’ہمیں نہیں معلوم تھا کہ یہ شخص دہشت گرد ہے، اس کے جسم پر بہت زیادہ بال ہیں اس لیے ہم نے سوچا کہ یہ تصویر ہمارے اشتہار کے لیے بہترین رہے گی۔‘

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ کمپنی نے یہ تصویر سماجی رابطے کی ویب سائٹ سے اٹھائی تھی جہاں پر یہ تصویر کئی بار استعمال ہوئی اور اس پر بڑے دلچسپ کیپشن دیے گئے۔

خالد شیخ محمد اس وقت گونتانامو بے میں زیر حراست ہیں۔

اسی بارے میں