سچن نے نیلور کا ایک گاؤں ’گود لے لیا‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption سچن کے گاؤں گود لینے کے فیصلے کی وزیراعظم نریندر مودی نے بھی تعریف کی ہے

بھارت کے سابق کرکٹر اور رکن پارلیمان سچن تندولکر نے آندھرا پردیش کے ضلع نیلور میں واقع ایک گاؤں کو’گود‘ لے لیا ہے۔

سچن راجیہ سبھا کے رکن ہیں اور انہوں نے ایک حکومتی منصوبے کے تحت پتمراجوري كدر كے گاؤں کی حالت سدھارنے کا بیڑا اٹھایا ہے۔

تندولکر نے پہلے مرحلے میں گاؤں کے لیے تقریباً دو کروڑ 80 لاکھ روپے کے ترقیاتی کاموں کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔

ان میں کمیونٹی سینٹر، آنگن باڑی سکول اور باورچی خانے، کھیل کا میدان، آرام خانہ اور بیت الخلاء کی تعمیر شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’کرکٹ کی زبان میں کہوں تو پہلی اننگز میں ہم کئی طرح کی سہولیات دیں گے۔‘

اس موقع پر سچن نے دیہاتیوں سے شراب اور تمباکو کی لت چھوڑنے کی اپیل بھی کی۔

سچن نے لوگوں سے بیٹیوں کو بیٹوں کے برابر اہمیت دینے کو کہا اور کہا کہ ’وہ ہمارے ملک کا مستقبل ہیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’بہت سے لوگوں نے مجھ سے پوچھا کہ یہی گاؤں کیوں اور میرا سادہ جواب ہوتا ہے، میں نے ہندوستان کے لیے کھیلا ہے اور یہ لوگوں کا شکریہ ادا کرنے کا میرا طریقہ ہے۔‘

سچن کے گاؤں گود لینے کے فیصلے کی وزیراعظم نریندر مودی نے بھی تعریف کی ہے۔

مودی نے ٹویٹ کیا، ’میں یہ جان کر خوش ہوں کہ یہ عظیم کھلاڑی رہنما مثالی منصوبے کے تحت ایک گاؤں گود لیں گے۔‘

اسی بارے میں