’دو بہنوں‘ کے ہاتھوں ایک اور لڑکے کی پٹائی

تصویر کے کاپی رائٹ YouTuve
Image caption اس نئی ویڈیو میں لڑکیاں وہی لگ رہی ہیں جنھوں نے ہریانہ میں ایک بس میں لڑکوں کو مارا تھا

بھارت میں ایک نئی ویڈیو منطرِ عام پر آئی ہے جس میں دو بہنیں ایک پارک میں ایک لڑکے کی پٹائی کرتی دکھائی گئی ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق یہ دونوں بہنیں وہی ہیں جن کی ایک ویڈیو پہلے ہی منظر عام پر آ چکی ہے جس میں وہ چھیڑ چھاڑ کرنے پر بس میں لڑکوں سے لڑ رہی ہیں۔

اس نئی ویڈیو میں یہ دونوں لڑکیاں ایک پارک میں ایک لڑکے کو مار رہی ہیں۔

بھارتی ٹی وی چینل این ڈی ٹی وی نے بی بی سی ٹرینڈنگ کو بتایا کہ یہ نئی ویڈیو ایک صحافی کی جانب سے آئی ہے لیکن وہ صحافی اپنے ذرائع بتانے کو تیار نہیں ہے۔

اس نئی ویڈیو میں لڑکیاں وہی لگ رہی ہیں جنھوں نے ہریانہ میں ایک بس میں لڑکوں کو مارا تھا۔

این ڈی ٹی وی کے مطابق یہ نئی ویڈیو ایک ماہ پرانی ہے۔

این ڈی ٹی وی کی ایک صحافی نے ٹویٹ کیا ’بہت عجیب ہے کہ روہتک کی بہنوں کی ایک اور ویڈیو سامنے آئی ہے جو ایک ماہ پرانی ہے۔ اور ایک بار پھر کیمرے میں لڑکے کو چھیڑ چھاڑ کرتے ہوئے نہیں دکھایا گیا۔‘

یاد رہے کہ بھارتی ریاست ہریانہ کی حکومت نے روہتک میں ایک بس میں چھیڑ چھاڑ کرنے والے تین نوجوانوں کی پٹائی کرنے والی دو لڑکیوں کو انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔

پوجا اور آرتی نامی دو بہنوں نے بس میں ان کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے والے تین نوجوانوں کی بیلٹ سے پٹائی کی تھی۔

اس پورے واقعے کی ویڈیو ایک موبائل فون میں بنا لی گئی تھی جو کہ ٹیلی ویژن چینلز پر چلی اور سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔

انڈین ایکسپریس اخبار کے مطابق بس پر ہونے والی لڑائی کا مرکزی عینی شاہد شامنے آ گیا ہے۔ ’تاہم اس حاملہ خاتون کا پتا نہیں چل رہا جنھوں نے مبینہ طور پر ویڈیو بنائی تھی اور جن کے بارے میں دونوں بہنوں کا کہنا ہے کہ وہ لڑائی ختم کرانے کے لیے بول رہی تھیں۔ اور بس ہی پر ایک خاتون جو بہنوں کے حق میں آواز اٹھا رہی تھیں۔‘

اسی بارے میں