وزیراعظم مودی کا سوٹ لاکھوں ڈالر میں فروخت ہو گیا

Image caption وزیراعظم مودی کے اس سوٹ پر خاصی تنقید کی گئی تھی

بھارت میں ایک تاجر نے وزیر اعظم نریندر مودی کے اس مشہور سوٹ کو چھ لاکھ 90 ہزار ڈالر میں خرید لیا ہے جس پر ان کا نام کڑھائی کیا ہوا ہے۔

بولی جیتنے والے تاجر ہتیش پٹیل نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا ’ ہم اس سوٹ کو اپنی فیکٹری میں رکھیں گے تاکہ اس سے متاثر ہو سکیں۔‘

ہتیش پٹیل نے بتایا کہ انہوں نے یہ بولی اپنے والد کے کہنے پر لگائی تھی۔

بھارتی وزیراعظم نے یہ سوٹ امریکی صدر براک اوباما کے دورۂ بھارت کے دوران پہنا تھا۔

بولی میں سوٹ کے ساتھ ساتھ نریندر مودی کو وزارتِ اعظمیٰ کا عہدہ سنبھالنے پر ملنے والے سینکڑوں تحائف بھی نیلامی میں رکھے گئے تھے۔جن سے حاصل ہونے والی رقم سے ملک کے آلودہ ترین دریا گنگا کی صفائی کی جائے گی۔

خیال رہے سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر وزیراعظم مودی کے دس لاکھ روپے مالیت کے اس سوٹ پر سخت تنقید کی گئی تھی۔ جب یہ معلوم ہوا تھا کہ اس سوٹ کی ہر دھاری میں ان کا نام بار بار لکھا ہوا ہے۔

اس وقت حزب اختلاف کی جماعت کانگریس پارٹی کے سینیئر رہنما جے رام رمیش نےنریندر مودی کو ’احساس برتری کا شکار‘ کہا تھا جبکہ سیاسی کارٹونسٹ منجول نے ایک کارٹون شائع کیا ہے جس میں ایک عام آدمی نریندر مودی سے ان کے سوٹ کے بارے میں سوال کر رہا ہے جس کی قمیص پر بھارت کے مسائل درج ہیں۔

مصنف کرشن پرتاب سنگھ نے اپنے ٹویٹ میں نریندر مودی کے سوٹ کی قیمت پر تنقید کرتے ہوئے مزید لکھا کہ بھارت میں اس ہفتے آٹھ غریب کسانوں نے مفلسی کی وجہ سے خودکشی کر لی جبکہ وزیر اعظم اتنا مہنگا سوٹ پہنتے ہیں۔

اسی بارے میں