ساتھ کھانا کھانے پر’دلت کی ناک کاٹ دی‘

تصویر کے کاپی رائٹ AARJU ALAM
Image caption نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق دلتوں کے خلاف جرائم کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے

بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی سے تقریباً 450 کلومیٹر دور ریاست اترپردیش کے ضلع جالون میں ایک دلت کی ناک کاٹنے کی مبینہ کوشش کی گئی۔

مادھوگڑھ بلاک کے سرپتپورا گاؤں کے رہنے والے نچلی ذات کے امر سنگھ دوہرے کا الزام ہے کہ اونچی ذات کے کچھ بااثر افراد نے ان کی ناک کاٹنے کی کوشش کی۔

امر سنگھ دوہرے کے مطابق ان کی ’غلطی‘ یہ تھی کہ انھوں نے گاؤں کی ایک شادی میں اونچی ذات والوں کے ساتھ بیٹھ کر کھانا کھا لیا تھا۔

نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق دلتوں کے خلاف جرائم کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے مگر تمام معاملات کے ذمہ داروں کو سزا نہیں دی جا سکی ہے۔

دوہرے کا کہنا ہے کہ ان کی پچھلی تین نسلیں سنجے سنگھ کے یہاں خدمت کرتی آ رہی ہیں۔ اس کی وجہ سے وہ سنجے سنگھ کے بھائی کی شادی میں شرکت کے لیے اناؤ گئے تھے۔

’پولیس کی ٹال مٹول‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ابھی تک کسی کی گرفتاری نہیں ہوئی ہے

دوہرے کا کہنا تھا کہ بارات سے واپس آنے کے بعد گاؤں کے کچھ اونچی ذات کے لوگوں نے ان سے مار پیٹ کی اور ان کی ناک کاٹنے کی کوشش کی۔

دوہرے کا الزام ہے کہ اس کی شکایت لے کر جب وہ مادھوگڑھ تھانے گئے تو پولیس نے ٹال مٹول کا رویہ اپنایا۔

سنجے سنگھ کے خاندان کی ایک خاتون نیرج سنگھ سماج وادی پارٹی کی جالون ضلع کی رکن ہیں۔ ان کے دباؤ پر پولیس نے واردات کے اگلے دن کیس درج کیا۔

معاملے میں تین افراد کو ملزم بنایا گیا ہے لیکن ابھی تک کسی کی گرفتاری نہیں ہوئی ہے۔

ملزم بےخوف گھوم رہے ہیں

تصویر کے کاپی رائٹ AARJU ALAM
Image caption امر سنگھ دوہرے اور ان کے خاندان کے لوگ ڈرے ہوئے ہیں

بی بی سی نے ملزمان کا مؤقف جاننے کی کوشش کی لیکن ان کے گھر کوئی موجود نہیں تھا اور اردگرد کے لوگ بھی بات کرنے کو تیار نہیں تھے۔

سرپتپورا گاؤں کے سربراہ چھوٹےلال خود اونچی ذات سے ہیں لیکن انھوں نے بھی اس معاملے میں براہ راست کچھ کہنے سے بچنے کی کوشش کی۔

وہ کہتے ہیں کہ’ہمیں تو کوئی پوچھتا نہیں ہے۔ میں تو نام محض کا پردھان ہوں۔ اس معاملے میں بھی کوئی میرے پاس نہیں آیا۔‘

مادھوگڑھ پولیس کے سرکل افسر منوج گپتا نے کہا کہ ’ناک کاٹی نہیں گئی ہے، ناک پر چوٹ لگی ہے۔ یہ آپس میں مار پیٹ کا معاملہ ہے۔ ملزمان کو گرفتار کر کے جلد ہی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔‘

دوسری جانب امر سنگھ دوہرے اور ان کے خاندان کے لوگ ڈرے ہوئے ہیں۔ پولیس کا سلوک دیکھ ان کی فکر بڑھتی جا رہی ہے.

اسی بارے میں