ہانگ کانگ میں چینی سیاحوں کے خلاف مظاہرے اور گرفتاریاں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ہانگ کانگ کے یوئن لونگ میں چینی سیاحوں کے خلاف مظاہرے کے دوران تصادم ہوا

ہانگ کانگ پولیس نے چین سے خریدداری کی غرض سے آنے والے سیاحوں کے خلاف ایک مہینے میں تیسری بار مظاہرہ کرنے پر 30 افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔

تصادم اس وقت شروع ہو گیا جب اتوار کو سینکڑوں لوگوں نے چینی سرحد کے قریب واقع شہر یوئن لونگ میں مظاہرہ کیا۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ چین کے نام نہاد متوازی تاجر ویزا قانون کا فائدہ اٹھا کر ہانگ کانگ سے سامان خرید کر سرحد پار اسے اچھے منافع پر بیچتے ہیں۔

بعض شہریوں کا خیال تھا کہ مظاہرین تجارت کو متاثر کر رہے ہیں۔

تاجر مخالف مظاہرین نے یوئن لونگ کے قصباتی شہر میں ریلی نکالی جہاں بڑی تعداد میں چینی سیاح آتے ہیں اور بہت سی کمپنیاں ان کا استقبال کرتی ہیں۔

مظاہرین کا کہنا ہے کہ چین کے تاجر ہانگ کانگ سے اچھی کوالٹی کا سامان کم قیمت میں خرید کر اپنے یہاں اونچی قیمتوں پر بیچتے ہیں کیونکہ انھیں یہاں سامان یا سروس پر ٹیکس نہیں دینا پڑتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption پولیس نے ہجوم کو قابو میں کرنے کے لیے ڈنڈوں اور کالی مرچ کی سپرے کا استعمال کیا

ان کا کہنا ہے کہ اس سے تھوک بازار کی قیمتیں متاثر ہوتی ہیں اور عام دکانداروں کو نقصان ہوتا ہے۔

مظاہرین حکومت سے ان ضوابط میں تبدیلی کا مطالبہ کر رہے ہیں جس کے تحت کسی کو ایک دن میں کئی بار چین سے ہانگ کانگ آنے جانے کی اجازت ہے۔

ہانگ کانگ انڈیجینس تنظیم کی جانب سے مظاہرہ کرنے والے کیلون لی نے کہا ’چینی سمگلروں کے خلاف لوگوں میں بہت غصہ ہے کیونکہ وہ ہمیں پسند نہیں، وہ قیمتوں کو متاثر کرتے ہیں، دوسری تمام چیزوں کو مہنگا کرتے ہیں، بہت زیادہ بدامنی پھیلاتے ہیں اور ہمیں ان سے کوئی فائدہ نہیں ہوتا ہے۔‘

ایک مقامی شخص ٹام لاؤ نے خبررساں ادارے روئیٹرز کو بتایا کہ چینی باشندے اچھی کوالٹی کی چیزیں خریدنا چاہتے ہیں اور یہ مظاہرین ان کے لیے مشکلات پیدا کر رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC Chinese
Image caption ہانگ کانگ میں گذشتہ کئی برسوں سے چین مخالف تحریکیں جاری ہیں

پولیس کا کہنا ہے کہ 36 افراد کو حملہ کرنے والے ہتھیار، مار پیٹ اور بدامنی پھیلانے کے جرم میں گرفتار کی گیا۔

پیر کو ہانگ کانگ کے ٹرانسپورٹ اور ہاؤسنگ کے سیکریٹری اینتھنی چیؤنگ نے کہا کہ کہ حکومت سیاحوں کی میزبانی کرنے کی علاقائی صلاحیت پر غور کرے گی۔

رواں سال اسی طرح کے مزید دو مظاہرے ہوئے ہیں جن میں سے ایک گذشتہ ماہ ایک شاپنگ مال میں ہوا تھا۔

اسی بارے میں