پانڈے کے کاٹنے پر معاوضے کی ادائیگی

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption عام طور پر پانڈا کے بارے میں تصور یہی ہے کہ وہ بے حد نرم دل اور پیار کرنے والا جانور ہے

شمالی مغربی چین میں ایک شخص کو جنگلی پانڈے کے کاٹنے پر معاوضے کے طور پر 80 ہزار ڈالر دیے گئے ہیں۔

مقامی اخبار لانزو کے مطابق گزشتہ برس ایک جنگلی پانڈے نے گوان کوانزي نامی شخص کو اس وقت کاٹ لیا جب محکمہ جنگلات کے حکام یہ سوچ کر کہ پانڈا بیمار ہے اسے قابو میں کرنے کی کوشش کررہے تھے اور پانڈا بھاگتے بھاگتے متاثرہ شخص کے کھیت میں جاپہنچا۔

پانڈے کے کاٹنے سے گوان کوانزی کو اتنا شدید زخم آیا تھا کہ ان کےزخم کی سرجری کرنی پڑی تھی۔

واقعے کے بعد گوان کوانزی نے محکمہ جنگلات کے حکام کے خلاف مقدمہ کیا تھا۔

عام طور پر پانڈا کے بارے میں تصور یہی ہے کہ وہ بے حد نرم دل اور پیار کرنے والا جانور ہے لیکن اس کے دانت بہت بڑے اور تیز ہوتے ہیں اور جب وہ کانٹتا ہے تو شدید زخم دیتا ہے۔

یہ واقعہ مارچ 2014 میں تب کا ہے جب ایک دن ایک شخص نے چین کے شمالی مغربی گانسو صوبے کے لزبا نامی گاؤں کے قریب جنگل میں مٹی میں لت پت جنگلی پانڈے کو دیکھ کر مقامی اہلکاروں کو فون کیا۔

محکمہ جنگلات کے بعض اہلکار وہاں پہنچے اور پانڈے کا پتہ لگانے میں مدد کے لیے مقامی لوگوں کو بلایا لیکن جب پانڈے نے لوگوں کو دیکھا تو وہ گوان کے کھیت میں چلا گیا۔

پانڈے کو دیکھ کر گوان ڈر کے مارے سہم گئے اور ان کے سنبھلنے سے پہلے ہی پانڈے نے ان کے دائیں پیر پر کاٹ لیا۔

گوان نے اخبار کو بتایا ’ مجھے شدید در ہورہا تھا اور کاٹتے ہی خون بہنے لگا تھا۔‘

ساٹھ سالہ گوان نے حکام پر حالات سے صحیح طرح نہ نمٹنے کا مقدمہ درج کیا تھا۔

اطلاعات کے مطابق گوان ملنے والے معاوضے سے مطمئن ہیں ۔ ان کا کہنا ہے کا ہے اس رقم سے ان کے علاج کے بل ادا ہوجائے گے۔

خیال رہے کہ گوان کی ساتھ گھنٹے تک سرجری ہوئی تھی اور مقامی اخبار کے مطابق انہیں ایک اور آپریشن کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

اسی بارے میں