انڈیا:مجسموں کا باغ بنانےوالےآرٹسٹ انتقال کرگئے

نیک چند تصویر کے کاپی رائٹ afp
Image caption نیک چند نے مجسموں کا ایک مشہور باغ تعمیر کیا تھا

انڈیا کے شمالی شہر چندی گڑھ میں مجسموں کا ایک مشہور باغ تخلیق کرنے والے بھارتی آرٹسٹ نیک چند 90 سال کی عمر میں انتقال کرگئے ہیں۔

ان کے بیٹے انوج سائنی نے اے ایف پی نیوز ایجنسی کو بتایا کہ نیک چند کا انتقال جمعہ کو چندی گڑھ کے ایک ہسپتال میں دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے ہوا۔

نیک چند نے شہر میں پڑے ہوئے تعمیراتی ملبے سے 20 ایکڑ اراضی پر چندی گڑھ راک گارڈن میں مجسمے تخلیق کیے تھے۔

چاند نے کوئی باقاعدہ طور پر تعلیم حاصل نہیں کی تھی اور شہر میں بطور روڈ انسپکٹر کام کرتے تھے۔

انھوں نے دسممبر میں اے ایف پی بتایا تھا کہ ’میں نے 1950 کی دہائی میں شوق کی وجہ سے باغ بنانا شروع کیا تھا۔‘

’میرے پاس بہت سے خیالات تھے، میں ہر وقت سوچتا رہتا تھا۔۔۔ میں نے جسے لوگ کباڑ کہتے تھے اس میں بھی خوبصورتی اور آرٹ دیکھی تھی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption نیک چند شہر کی تعمیراتی جگہوں سے ملبہ اٹھا کر اس سے مجسمے بناتے تھے
تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption راک گارڈن کو 1976 میں عوام کے لیے کھولا گیا تھا اور اب سینکڑوں لوگ روزانہ وہاں جاتے ہیں

ان کے بیٹے سائنی نے کہا کہ ’ان کا انتقال آدھی رات کے بعد ہوا۔ وہ خراب صحت کی وجہ سے گزشتہ چند دنوں سے ہسپتال میں تھے۔‘

انڈیا کے وزیر اعظم نریندر مودی نے نیک چند کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ انھیں ’ہمیشہ ان کی فنکارانہ صلاحیتوں کے لیے یاد رکھا جائے گا۔‘

اسی بارے میں