’مضرِ صحت‘ نوڈلز: نیسلے پر دس کروڑ ڈالر ہرجانے کا دعویٰ

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

بھارت کے ایک سرکاری اہلکار کے مطابق بھارت ’غیر منصفانہ تجارت کے طریقوں‘ کے استعمال پر عالمی فوڈ کمپنی نیسلے پر دس کروڑ ڈالر ہرجانے کا دعویٰ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بین الاقوامی کمپنی نیسلے کے خلاف شکایت ہے کہ اس کی تیار کردہ میگی نوڈلز کے گمراہ کن اشتہارات کے ذریعے سے صارفین کو نقصان پہنچا ہے۔

بھارت میں میگی نوڈلز پر اُس وقت پابندی لگا دی گئی تھی جب بھارت کی فوڈ سیفٹی اینڈ سٹینڈرڈز ایجنسی نے نیسلے پر الزام لگایا تھا کہ وہ فوڈ سیفٹی کے قوانین پر عمل درآمد کرنے میں ناکام رہا ہے۔

نیسلے نے اس پابندی کو ممبئی ہائی کورٹ میں چیلنج کر رکھا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ ان کی مصنوعات محفوظ ہیں۔

تاہم کمپنی جو جھٹ پٹ تیار ہونے والے نوڈلز کی 80 فیصد مارکیٹ پر راج کرتی ہے، پہلے ہی میگی کی 40 کروڑ ٹن کی مصنوعات کو ضائع کرچکی ہے۔

بھارت کے صارفین کی جانب سے دعویٰ عدالت کے ذریعے سے نہیں بلکہ نیم عدالتی اختیارات رکھنے والے ادارے نیشنل کنزیومر ڈیسپیوٹس ریڈریسل کمیشن( این سی ڈی آ سی) کے تحت کیا گیا ہے۔

دہلی میں موجود نیسلے کے ترجمان نے خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا کہ کمپنی نوٹس موصول ہونے کے بعد ہی ’باقاعدہ ردعمل‘ دینے کے قابل ہوگی۔

اس سے پہلے بھارت کی فوڈ اینڈ سیفٹی اتھارٹی کا کہنا تھا کہ نوڈلز کے ٹیسٹ میں ’غیر محفوظ اور مضر‘ اشیا سامنے آئی تھیں۔

نیسلے کا کہنا ہے کہ امریکہ، برطانیہ اور سنگاپور سمیت دیگر ممالک میں ہونے والے ٹیسٹ کے نتائج میں نوڈلز کو محفوظ قرار دیا گیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption نیسلے کا کہنا ہے کہ امریکہ، برطانیہ اور سنگاپور سمیت دیگر ممالک میں ہونے والے ٹیسٹ کے نتائج میں نوڈلز کو محفوظ قرار دیا گیا ہے

حال ہی میں بھارت کی مغربی ریاست گوا اور شمالی شہر میسور کی دو لیبارٹریز نے بھی نوڈلز کو کلیئر کر دیا تھا لیکن بھارت کی فوڈ اینڈ سیفٹی اتھارٹی نے نتائج کو یہ کہہ کر مسترد کر دیا تھا کہ ٹیسٹ میں غلطیاں ہوئی ہیں۔

ممبئی ہائی کورٹ کی جانب سے اس کیس پر محفوظ فیصلہ بھی جلد آنے کا امکان ہے۔

عدالت نے نوڈلز کا دوبارہ ٹیسٹ کرانے کی تجویز پیش کی تھی، نیسلے نے عدالت کی تجویز کو قبول کیا لیکن بھارتی حکام نے اسے مسترد کردیا۔

ریگولیٹر کے وکیل نے بھارت کے اخبار انڈین ایکسپریس کو بتایا کہ ’ قانون کے مطابق اس طرح ٹیسٹ کے لیے کوئی شرائط نہیں ہیں، نیسلے کی وجہ سے ایک مختلف طریقۂ کار پر عمل نہیں کریں گے۔ ‘

قانونی کارروائی کی خبر نے بھارتی سوشل میڈیا پر ایک ہلچل مچا دی ہے ۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹیگ RS 634 کو استعمال کیا جا رہا ہے ۔ جو حکومت کی ہرجانہ کے رقم 634 کروڑ کو ظاہر کر رہی ہے۔

سب سے زیادہ پوچھا جا رہا ہے کہ صارفین کے نام پر حاصل کی جانے والی رقم کو ان لوگوں میں تقسیم کیا جائے گا جنھوں نے کبھی بھی میگی کھائے ہوں۔

اسی بارے میں