بھارت میں سیاحتی ٹرین کو حادثہ، دو برطانوی ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ ریلوے ٹریک ہمالیہ کے پہاڑی سلسلے سے ہوتا ہوا تقریباً چار ہزار فٹ بلندی پر جاتا ہے

بھارت کےسیاحتی مقام شملہ جانے والی ایک خصوصی ٹرین کے پٹری سے اتر جانے کی وجہ سے دو برطانوی سیاح ہلاک جبکہ درجنوں زخمی ہوگئے ہیں۔

یہ واقع شمالی بھارت میں کلکہ سے شملہ کے درمیان پہاڑی سلسلے میں پیش آیا ہے جو سیاحوں میں بہت مقبول ہے اور یونیسکو کے عالمی ورثے میں بھی شامل ہے۔

37 برطانوی سیاحوں کے لیے خصوصی طور پر چلائی جانے والی یہ ٹرین کلکہ سے نکلنے کے تھوڑی دیر بعد ہی پٹری سے اترگئی تھی۔

پولیس ترجمان نے بتایا ہے کہ ’کم از کم دو سیاح تو موقع پر ہی ہلاک ہوگئے تھے جبکہ دیگر سیاح زخمی ہیں۔ زخمیوں قریبی شہر چندی گڑھ کے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔‘

دفتر خارجہ کی ترجمان کا کہنا ہے کہ ’بھارت کی شمالی ریاست ہریانہ میں پیش آنے والے اس حادثے سے متاثرہ برطانوی شہریوں کے بارے میں اطلاعات اکھٹی کر رہے ہیں اور انھیں ہر قسم کے امداد پہنچانے کے لیے تیار ہیں۔‘

ناردرن ریلوے کے ضلعی افسر دنیش کمار کا کہنا ہے کہ ابھی اس حادثے کی اصل وجہ معلوم نہیں ہو سکی ہے جبکہ تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے۔

یہ انتہائی تنگ ریلوے ٹریک ہے جسے اکثر ’کھلونا ٹرین ٹریک‘ کہا جاتا ہے سنہ 1903 میں شملہ سے جوڑنے کے لیے بنایا گیا تھا۔جب موسم گرما میں یہ مقام برطانوی دارالحکومت ہوا کرتا تھا۔

یہ ریلوے ٹریک ہمالیہ کے پہاڑی سلسلے سے ہوتا ہوا تقریباً چار ہزار فٹ بلندی پر جاتا ہے اور یہ ٹریک بہت سی پلوں، سرنگوں اور ارد گرد کے مناظر کے لیے بہت مشہور ہے۔

اسی بارے میں