سعودی عرب میں مجلس کے شرکا پر فائرنگ، پانچ ہلاک

Image caption شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے

سعودی عرب کے میڈیا کے مطابق ملک کے مشرقی علاقے میں ایک مجلس کے شرکا پر فائرنگ سے کم سے کم پانچ افراد ہلاک اور چار زخمی ہو گئے ہیں۔

شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

دمام میں شیعہ مسلمانوں کی مسجد کے باہر خودکش دھماکہ، چار ہلاک

سعودیہ: ’دولتِ اسلامیہ شیعہ مسجد پر خودکش حملے کی ذمہ دار‘

العریبیہ ٹی وی کے مطابق فائرنگ کرنے والا ایک حملہ آور بھی مارا گیا جبکہ اطلاعات کے مطابق دو دیگر حملہ آوروں کو بھی گرفتار کر لیا گیا۔

سعودی عرب کے ایک نیوز چینل کے مطابق یہ واقعہ جمعے کو ملک کے مشرقی علاقے میں پیش آیا۔

چینل کے مطابق فائرنگ میں چار افراد زخمی بھی ہوئے۔

ایک عینی شاید نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ’ایک مسلح شخص نے مجلس کے شرکا پر فائرنگ کی۔‘

سعودی عرب کے مشرق میں جمعے ہی کو شیعہ مسلمانوں کے خلاف دیگر مقامات سے بھی حملوں کی اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں۔

شدت پسند تنظیم دولتِ اسلامیہ نے رواں برس مئی میں سعودی عرب کے شہر دمام میں شعیہ مسلمانوں کی ایک مسجد کو نشانہ بنایا تھا۔

اس واقعہ سے ایک ہفتہ قبل سعودی عرب کے مشرقی صوبے قطیف میں شیعہ مسلمانوں کی مسجد پر ایک خودکش حملے میں 20 سے زیادہ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

سعودی عرب کا مشرقی صوبہ قطیف تیل کی دولت سے مالا مال ہے اور اس کی زیادہ تر آبادی شیعہ مسلک سے تعلق رکھتی ہے۔

اسی بارے میں