دہلی میں دو بچیوں کا ریپ، پانچ افراد گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption جنسی زیادتی کے حالیہ واقعات کے بعد لوگوں میں شدید غصہ پایا جاتا ہے

بھارت میں پولیس کا کہنا ہے کہ دہلی میں ڈھائی سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے تعلق میں دو 17 سالہ لڑکوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

دونوں لڑکوں کو جنسی زیادتی کیے جانے والی جگہ کے آس پاس رہنے والے رہائشیوں سے پوچھ گچھ کرنے کے بعد حراست میں لیا گیا ہے اور دونوں لڑکوں کے بارے میں پولیس کا کہنا ہے کہ یہ دونوں افراد بچی کے خاندان والوں کے جانتے ہیں۔

اس کے علاوہ دہلی میں ہی ایک پانچ سالہ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے ایک اور واقعے میں تین افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

دہلی میں دو لڑکیوں کا ریپ، وزیراعلیٰ کی پولیس پر تنقید

چار سالہ بچی کا ریپ، دو افراد سے تفتیش

بنگلور میں بس میں لڑکی کا ریپ، دو افراد گرفتار

ان تازہ واقعات کے بعد بھارت میں جنسی تشدد کی روک تھام کے لیے خاطر خواہ انتظامات نہ کرنے پر شدید غصہ پایا جاتا ہے۔

دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے شہر میں کم عمر بچوں کے تحفظ کے لیے خاطر خواہ انتظامات نہ کرنے کا الزام پولیس اور حکومت پر لگایا ہے۔

یہ حالیہ واقعات ایک ایسے وقت ہوئے ہیں جب گذشتہ ہفتے دہلی میں ہی ایک چار سالہ لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ دو الگ الگ واقعات میں نشانہ بننے والی لڑکیوں میں سے ایک ڈھائی سالہ لڑکی کو جمعے کی رات مغربی دہلی سے دو افراد نے اغوا کیا تھا۔

جنسی زیادتی کے بعد انھیں ان کے گھر کے قریب ایک پارک میں چھوڑ دیا گیا تھا۔

دوسری جانب شہر کے مشرقی علاقے میں پیش آنے والے دوسرے واقعے میں ایک پانچ سالہ لڑکی کو تین افراد نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

پولیس کے مطابق انھیں پڑوس کے گھر میں بلایا گیا جہاں انھیں کئی بار جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

اسی بارے میں