پاکستانی فائرنگ سے دو اہلکار ہلاک: بھارتی فوج

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گذشتہ دو برس سے لائن آف کنٹرول پر دونوں ملکوں کی افواج کے درمیان کشیدگی برقرار ہے

بھارت کے زیر انتظام کشمیر کے دارالحکومت سرینگر میں تعینات بھارتی فوجکے ترجمان نے دعویٰ کیا ہے کہ پیر اور منگل کی درمیانی شب پاکستانی افواج نے بھارتی اہداف پر راکٹ داغے جس کے نتیجے میں دو فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔

سرینگر میں تعینات بھارتی فوج کی 15 ویں کور کے ترجمان کرنل این این جوشی کے مطابق یہ واقعہ شمالی مشرقی ضلع بانڈی پورہ کے گوریز خطے میں پیش آیا۔

انھوں نے دعویٰ کیا کہ راکٹ حملے میں ٹیریٹوریل آرمی کے دو مقامی اہلکار طارق لون اور وسیم لون مارے گئے۔

پاکستان اور بھارت ایک دوسرے پر لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کے الزامات لگاتے رہتے ہیں۔

پاکستانی فوج کی طرف سے جنگ بندی معاہدے کی تازہ خلاف ورزی کا دعویٰ ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب کشمیر کی انتظامیہ سات نومبر کو بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی وادی آمد کے سلسلے تیاریوں کو حتمی شکل دے رہی ہے۔

واضح رہے گذشتہ دو برس سے لائن آف کنٹرول پر دونوں ملکوں کی افواج کے درمیان کشیدگی برقرار ہے اور وقفہ وقفہ سے فائرنگ کے واقعات رونما ہورہے ہیں۔

تاہم پچھلے چند ماہ سے ماحول بظاہر پرسکون ہے کیونکہ دونوں ملکوں نے سرحدوں پر کشیدگی ختم کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PTI
Image caption کشمیر میں سات نومبر کو وزیر اعظم مودی کا پروگرام ہے

فوجی ترجمان نے بتایا کہ گوریز خطے میں وسیع پیمانے پر تلاشی مہم کا آغاز کیا گیا ہے کیونکہ فوج کو شبہ ہے کہ پاکستانی فائرنگ کی آڑ میں مسلح درانداز بھارتی کنٹرول والے علاقوں میں داخل ہوگئے ہیں۔

پاکستان کا ایوان بالا

دوسری جانب پاکستان کے ایوان بالا یعنی سینٹ کو ایک تحریری جواب میں بتایا گیا ہے کہ بھارتی مسلح افواج نے گذشتہ دو سال کے دوران لائن آف کنٹرول اور ورکنگ بانڈریز کی 997 مرتبہ خلاف ورزی کی ہے جبکہ ان خلاف ورزیوں کے دوران70 افراد ہلاک ہوئے ہیں جن میں فوج اور سویلین بھی شامل ہیں۔

وزارت دفاع کی طرف سے جمع کروائے گئے تحریری جواب میں کہا گیا ہے کہ بھارتی مسلح افواج کی طرف سے رواں سال کے دوران لائن آف کنٹرول اور ورکنگ بانڈری پر بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں 34افراد ہلاک ہوئے جن میں33 سویلین شامل ہیں۔

اس تحریری جواب میں کہا گیا ہے کہ سنہ دوہزار تیرہ کے دوران بھارتی افواج نے 464 مرتبہ ورکنگ بانڈری اور لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی اور بلا اشتعال فائرنگ نے نتیجے میں سولہ افراد ہلاک ہوئے جن میں دس فوجی شامل ہیں۔

اسی بارے میں