’غیر ملکی گیسٹ ہاؤس پر حملہ کرنے والوں کو ہلاک کر دیا گیا‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP

افغانستان میں حکام کے مطابق دارالحکومت کابل میں واقع ہسپانوی سفارت خانے کے قریب ایک غیر ملکی گیسٹ ہاؤس پر حملے میں ملوث چار مسلح افراد کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔

حکام کا مزید کہنا ہے کہ اس حملے میں چار پولیس اہکار بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

کابل میں ہسپانوی سفارتِ خانے کے قریب حملہ

اس سے پہلے ہسپانوی حکومت نے تصدیق کی تھی کہ جمعے کی رات ہونے والے اس حملے میں اس کا ایک پولیس اہلکار بھی ہلاک ہوا تھا۔

طالبان کا کہنا ہے کہ اس کے جنگجو شیر پور ضلعے میں کار بم دھماکہ کرنے کے بعد اس علاقے میں داخل ہوئے تھے۔

ابتدائی طور پر ہسپانوی سفارت خانے پر حملے کی اطلاعات تھیں تاہم سپین کے وزیراعظم نے ان اطلاعات کو مسترد کر دیا تھا۔

کابل پولیس کے ترجمان بشیر مجاہد نے بی بی سی کو بتایا کہ اس حملے میں چار شدت پسند ملوث تھے۔

انھوں نے بتایا کہ پہلے ایک حملہ آور نے گیسٹ ہاؤس کے مرکزی دروازے پر دھماکہ خیز مواد کو اڑایا جس کے بعد دوسرے تین حملہ آور عمارت میں داخل ہوئے۔

بشیر مجاہد کے مطابق چار حملہ آوروں کو کئی گھنٹوں کی لڑائی کے بعد ہلاک کر دیا گیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس لڑائی میں چار افغان پولیس اہلکاروں سمیت دو غیر ملکی افراد بھی مارے گئے۔

پولیس ترجمان کے مطابق حملے میں کم سے کم نو افراد زخمی ہوئے۔

یہ طالبان کی طرف سے اہم افغان مقامات پر حملوں کے سلسلے کی ایک تازہ کڑی ہے۔

طالبان نے گذشتہ منگل کو قندھار ایئرپورٹ پر حملہ کیا تھا جس میں کم از کم 50 افراد ہلاک ہو ئے تھے۔

اسی بارے میں