مزارِ شریف میں بھارتی قونصل خانے کے قریب فائرنگ

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

افغانستان کے شمالی شہر مزارِ شریف میں واقع بھارتی قونصل خانے کے قریب دھماکوں اور فائرنگ کی آوازیں سنی گئی ہیں۔

تاحال یہ واضح نہیں کہ اس فائرنگ اور دھماکوں کا ہدف بھارتی قونصل خانہ ہی ہے یا نہیں۔

جس جگہ یہ دھماکے ہوئے ہیں وہیں ایک مقامی سیاست دان کی ملکیتی عمارت بھی واقع ہے۔

قونصل خانے میں موجود ایک بھارتی افسر نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ لڑائی قونصل خانے کی عمارت کے اردگرد جاری ہے۔

صوبہ بلخ کے گورنر کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ حملہ آوروں نے عمارت میں داخل ہونے کی کوشش کی تھی لیکن وہ اس میں کامیاب نہیں ہو سکے۔

افغانستان میں بھارت کی سفارتی عمارات ماضی میں بھی شدت پسندوں کے حملوں کا نشانہ بنتی رہی ہیں۔

مئی 2014 میں مسلح افراد نے ہرات میں بھارتی قونصل خانے پر حملہ کیا تھا جبکہ اگست 2013 میں جلال آباد میں بھارتی قونصل خانے پر حملے میں نو شہری مارے گئے تھے۔

اس کے علاوہ کابل میں بھارتی سفارتخانہ بھی سنہ 2008 اور سنہ 2009 میں شدت پسندوں کے حملوں کا نشانہ بن چکا ہے جن میں درجنوں افراد ہلاک ہوئے تھے۔

اسی بارے میں