کابل میں کار خودکش دھماکہ، سات میڈیا کارکنان ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption قندوز پر طالبان کے قبضے کی کوریج کے حوالے سے طالبان طلوع ٹی وی سے ناخوش ہیں

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک کار خود کش دھماکے میں میڈیا کی ایک بس کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں سات صحافی ہلاک ہو گئے ہیں۔

جس بس کو نشانہ بنایا گیا اس میں کبورہ میڈیا گروپ کے صحافیوں کے علاوہ طلوع ٹی وی اور طلوع نیوز کے کارکن بھی سوار تھے۔

اس کار خود کش حملے میں سات میڈیا کارکنان ہلاک جبکہ عام شہریوں سمیت بیس افراد زخمی ہوئے ہیں۔

اس دھماکے کی ذمہ داری کسی نے قبول نہیں کی ہے۔

طلوع ٹی وی نے ٹویٹ میں کہا ’دارالامان روڈ پر دہشت گردوں کے حملے میں ہمارے سات کارکنان ہلاک ہوئے ہیں۔‘

طلوع ٹی وی کے رپورٹر نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ خوش قسمت ہیں کہ اب بھی زندہ ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یہ حملہ ایسے وقت ہوا ہے جب چند ماہ قبل طالبان نے اعلان کیا تھا کہ طلوع ٹی وی اور ون ٹی وی ان کے نشانے پر ہیں

طلوع ٹی وی کے نیوز سیکشن کے ایک اور کارکن نے کہا کہ ان کے کئی ساتھی اس حملے میں زخمی ہوئے ہیں اور ان کو قریبی ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

یہ حملہ ایسے وقت ہوا ہے جب چند ماہ قبل طالبان نے اعلان کیا تھا کہ طلوع ٹی وی اور ون ٹی وی ان کے نشانے پر ہیں۔

قندوز پر طالبان کے قبضے کی کوریج کے حوالے سے طالبان طلوع ٹی وی سے ناخوش ہیں۔

اس سے قبل خبریں گردش کر رہی تھیں کہ روس کے سفارتخانے پر حملہ کیا گیا ہے لیکن بعد میں یہ بات سامنے آئی کہ میڈیا کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

اسی بارے میں