جھار کھنڈ: بارودی سرنگ کے دھماکے میں سات پولیس اہلکار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Ravi Prakash
Image caption زخمی پولیس اہل کاروں کو ہیلی کاپٹر کی مدد سے ریاستی دارالحکومت رانچی لایا گيا جہاں ان کا علاج چل رہا ہے

بھارتی ریاست جھارکھنڈ کے ضلع پلامو میں بارودی سرنگ کے دھماکے میں سات پولیس اہلکار ہلاک اور کئی زخمی ہوگئے۔

چھتر پور کے تھانہ علاقے میں كالاپہاڑي میں یہ واقعہ بدھ کی رات کو پیش آیا۔ اس حملے میں چھ پولیس اہلکاروں کے زخمی ہونے کی بھی اطلاع ہے۔

زخمی پولیس اہلکاروں کو ہیلی کاپٹر کی مدد سے ریاستی دارالحکومت رانچی لایا گيا جہاں ان کا علاج چل رہا ہے۔

ریاست جھارکھنڈ میں پولیس کے ترجمان اے ڈی جی ایس این پردھان نے اس واقعے کی تصدیق کی ہے۔

انہوں نے بی بی سی کو بتایا ’كالاپہاڑي میں کچھ نکسلیوں کے ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ اسی اطلاع کی بنیاد پر چھتر پور تھانے کی پولیس کو علاقے کی جانب روانہ کیا گیا تھا۔ چھتر پور اور حسین آباد کے درمیان كالاپہاڑي کے پاس نکسلیوں نے پہلے سے ہی لینڈ مائن بچھا رکھی تھی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Ravi Prakash
Image caption بھارت کی کئي ریاستوں میں ماؤنواز باغی سرگرم ہیں اور حکومتی فورسز کے خلاف کئی علاقوں میں بر سرپیکار ہیں

انہوں نے بتایا کہ اس دھماکے کی وجہ سے پولیس کی گاڑی چلانے والے ڈرائیور سنجے شرما اور چھ پولیس اہلکار موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔

اندھیرا ہونے کی وجہ سے پولیس کو ریسکیو آپریشن کرنے میں کافی مشکلات پیش آئیں۔ اس حملے میں چھتر پور تھانے کے انچارج بال بال بچ گئے۔ ان کی گاڑی اسی راستے سے گزر جانے کے بعد دھماکہ ہوا۔

دھماکے کی زد میں وہ گاڑی آئی جس میں تھانے کے انچارج کے پیچھے والی گاڑی میں13 پولیس اہلکار سوار تھے۔

پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ ڈی جی پی ڈی کے پانڈے نکسل سے متاثرہ جھمرا علاقے میں میٹنگ کے لیے گئے ہوئے ہیں اور جمعرات کی صبح وہ پلامو جائیں گے۔

بھارت کی کئي ریاستوں میں ماؤنواز باغی سرگرم ہیں اور حکومتی فورسز کے خلاف کئی علاقوں میں بر سرپیکار ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ پلاموں میں ماؤنواز باغیوں کے خلاف تلاشی مہم جاری ہے۔

اسی بارے میں