آر ایس ایس والے اب نیکر کی جگہ پتلون پہنیں گے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھیاجی جوشی کا کہنا ہے کہ ان کی تنظیم وقت کے ساتھ تبدیل ہوتی ہے

بھارت میں ہندو نظریاتی تنظیم آر ایس ایس نے اپنی وردی میں تبدیلی کرتے ہوئے خاکی رنگ کی نیکر کی جگہ بھورے رنگ کی پتلون کو وردی کا حصہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس بات کا اعلان راجستھان کے ناگور میں آر ایس ایس کی آل انڈیا یونین ایوان نمائندگان کے اجلاس کے بعد جنرل سیکریٹری بھياجي جوشی نے ایک پریس کانفرنس میں کیا۔

انھوں نے کہا کہ ’ہماری تنظیم وقت کے ساتھ تبدیل ہوتی ہے۔‘

بھياجي جوشی کا کہنا تھا کہ ’کوئی بھی تنظیم اتنی ترقی نہیں کر سکتی جتنی ہم نے کی ہے، اس لیے ہم نے اس تبدیلی کا اعلان کیا ہے۔‘

ساتھ ہی انھوں نے کہا کہ گذشتہ تین سالوں میں تنظیم نے کافی ترقی کی ہے اور نوجوانوں کے درمیان اپنی جگہ بنائی ہے۔

جے این یو میں مبینہ طور پر لگنے والےمبینہ ملک دشمن نعروں کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ ’ملک دشمن نعرے ملک کے کسی بھی حصے میں لگیں گے تو اس کے خلاف کارروائی تو کرنی پڑے گی۔‘

بھیاجی جوشی نے مزید کہا کہ ’چاہے ملک کی کوئی بھی حکومت ہو اس طرح سے ملک کے ٹکڑے ٹکڑے کرنے والوں کو کوئی بھی برداشت نہیں کر سکتا۔‘

انھوں نے سوال کیا کہ ’یہ ایک سنجیدہ موضوع ہے اور ایسی ذہنیت کو کیا سمجھا جائے۔‘

کانگریسی رہنما غلام نبی آزاد کی آر ایس ایس کے مقابلے اسلامک سٹیٹ والے بیان پر بھی بھیاجی جوشی نے شدید تنقید کی۔

انھوں نے کہا کہ ’غلام نبی آزاد نے ہمارے بارے میں جو بھی کہا اس سے ان کی جہالت جھلکتی ہے۔‘

اسی بارے میں