اشتہار میں’نسلی تعصب ‘ پر چینی کمپنی کی معذرت

تصویر کے کاپی رائٹ QIAOBI
Image caption یہ اشتہار مارچ میں جاری کیا گیا تھا لیکن حالیہ دنوں خبروں کا مرکز بنا

چین میں کپڑے دھونے والے پاؤڈر بنانے والی کمپنی نے اپنے اشتہار میں نسلی تعصب پیش کرنے کے الزامات کے بعد معذرت کی ہے۔

کیوبی کمپنی کا کہنا ہے وہ شدید الفاظ میں نسلی امتیاز کی مخالفت اور مذمت کرتے ہیں اور وہ اس اشتہار کے لیے معذرت خواہ ہیں۔

٭ کیا یہ سب سے زیادہ نسل پرستانہ اشتہار ہے؟

اشتہار میں ایک سیاہ فام شخص واشنگ مشین میں داخل ہوتا ہے اور مختلف رنگ میں دھل کر نکلتا ہے۔

اس سے قبل کمپنی کا کہنا تھا کہ وہ اس اشتہار کے ناقدین کچھ زیادہ ہی حساسیت کا اظہار کر رہے ہیں۔

تاہم سنیچر کی شب شنگھائی لیسشنگ کاسمیٹکس لمیٹڈ کو کی جانب سے معذرت نامہ جاری کیا ہے جس میں غیرملکی ذرائع ابلاغ کو بھی معاملہ بڑھانے کا الزام عائد کیا گیا۔

یہ اشتہار مارچ میں جاری کیا گیا تھا لیکن حالیہ دنوں خبروں کا مرکز بنا اوراحتجاج کے بعد اس کی تشہیر روک دی گئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ QIAOBI
Image caption واشنگ مشین سے جب سیاہ فام مرد باہر نکلتا ہے تو وہ گورے رنگ کا چینی شخص ہوتا ہے

کمپنی کا کہنا ہے انھوں نے اس اشتہار کو ہٹا دیا ہے اور وہ دوسروں سے بھی امید رکھتے ہیں کہ وہ اس کو آن لائن شیئر نہیں کریں گے۔

خیال رہے کہ یوٹیوب پر اس اشتہار کو 25 لاکھ مرتبہ دیکھا جا چکا ہے۔

اشتہار میں منظر ہے کہ ایک عورت لانڈری کر رہی ہے۔ ایک سیاہ فام شخص داخل ہوتا ہے جس کے چہرے پر پینٹ کے دھبے لگے ہوئے ہیں۔ دونوں ایک دوسرے کی جانب دیکھتے ہیں۔ عورت مرد کے منہ میں واشنگ پاؤڈر ڈالتی ہے۔ پھر اس مرد کو واشنگ مشین میں ڈال دیتی ہے۔

واشنگ مشین سے جب سیاہ فام مرد باہر نکلتا ہے تو وہ گورے رنگ کا چینی شخص ہوتا ہے۔ لانڈری کرتی ہوئی عورت اس تبدیلی سے بہت خوش ہوتی ہے۔

اسی بارے میں