چینی لڑکا جہاز میں چھپ کر دبئی پہنچ گیا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

ایک چینی لڑکا شنگھائی سے دبئی جانے والے ایمیریٹس کے مسافر طیارے میں سامان رکھنے والی جگہ سے ملا ہے۔

منگل کو ایمیریٹس کا کہنا تھا کہ جمعے کو پرواز ek303 میں چھپ کر دبئی پہنچنے والے چینی لڑکے کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

ایئرلائن نے اس لڑکے کا نام تو نہیں بتایا تاہم چین کے سرکاری خبر رساں ادارے ژن ہوا نے لڑکے کے بارے میں بتایا ہے کہ اس کی عمر 16 سال اور اس کا نام ژو ہے۔

اطلاعات کے مطابق لڑکے کا کہنا ہے کہ وہ ’سامان رکھنے والی جگہ میں بہت پرسکون تھا۔‘

تاہم اس کا کہنا تھا کہ اس نے اس تقریباً نو گھنٹوں کی پرواز کے دوران کچھ نہیں کھایا تھا۔

ژن ہوا کہ مطابق ژو نامی اس لڑکے کا کہنا تھا کہ ’میں نے سنا ہے کہ دبئی میں بھکاری بھی بہت پیسے کما لیتے ہیں۔‘

ایمیریٹس کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ہم دبئی حکام کے ساتھ مکمل تعاون کر رہے ہیں اور جیسا کہ یہ پولیس کا معاملہ ہے اس لیے اس وقت ہم زیادہ تبصرہ نہیں کر سکتے۔‘

چینی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے سفارتخانے کے عملے کے ارکان کو ہوائی اڈے بھیجا گیا ہے۔

ژن ہوا نے مزید بتایا: ’پراسیکیوٹرز کی جانب سے بلائے گئے مترجم کے مطابق لڑکے نے بتایا ہے کہ اس نے شنگھائی ایئرپورٹ پر لگی باڑ پر سے چھلانگ لگائی اور جیسے ہی سکیورٹی گارڈ نے دوسری جانب دیکھا تو وہ طیارے میں سامان رکھنے والی جگہ میں گھس گیا۔‘

اسی بارے میں