بہار کے ٹاپرز فیل، سکول کی منظوری منسوخ

تصویر کے کاپی رائٹ manish saandilya
Image caption بہار میں ٹاپ کرنے پر سوربھ کی پذیرائی

انڈیا کی شمال مشرقی ریاست بہار میں انٹرمیڈیٹ کے دو ٹاپ کرنے والے طلبہ کا جب دوبارہ امتحان لیا گیا تو وہ فیل ہو گئے۔

اس کے بعد چند دن قبل آنے والے ان کے نتائج کو منسوخ کر دیا گیا ہے۔

در اصل یہ معاملہ ایک ٹی وی چینل پر دکھائی جانے والی ایک رپورٹ کے بعد طول پکڑ گیا کہ بہار میں امتحانات میں بڑے پیمانے پر نقل ہوئی ہے۔

اور اس میں سائنس ٹاپر سوربھ سریشٹھ کے علاوہ آرٹس ٹاپر روبی رائے کے انٹرویوز نشر کیے گئے۔ ویڈیو میں روبی ٹھیک سے لفظ ’پولیٹیکل سائنس‘ بھی نہیں بولتی نظر آتیں اور جب ان سے اس کا مطلب پوچھا جاتا ہے تو وہ کہتی ہیں کہ یہ کھانا پکانے سے متعلق ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Biharpictures.com
Image caption بہار کے ایک سکول میں ایک طلبہ کے داخل ہونے کا منظر

بہار سکول اگزامنیشن بورڈ کے صدر لال كیشور پرساد سنگھ نے سنیچر کی شام ایک پریس کانفرنس میں یہ معلومات فراہم کیں۔

فیل قرار دیے جانے والے طلبہ میں سائنس ٹاپر سوربھ سریشٹھ اور تیسرا درجہ حاصل کرنے والے راہل کمار شامل ہیں۔

یہ دونوں ویشالی ضلعے کے وشنو رائے کالج کے طالب علم کے طور پر امتحان میں شامل ہوئے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ manish saandilya
Image caption بہار سکول اگزامنیشن بورڈ کے صدر لال كیشور پرساد سنگھ نے سکول کی منظوری کو بھی رد کر دیا ہے

اگزامنیشن بورڈ کے صدر نے سنیچر کو اس کالج کی منظوری بھی فوری طور پر معطل کرنے کا اعلان کیا۔

اس کے ساتھ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ اس پورے معاملے کی جانچ ہائی کورٹ کے ریٹائرڈ جج کی سربراہی والی تین رکنی کمیٹی کرے گی۔

دوسری جانب آرٹس کی ٹاپر روبی رائے تین جون کو دوبارہ لیے جانے والے امتحانات میں شامل نہیں ہوئیں اس لیے انھیں ایک اور موقع دیتے ہوئے 11 جون کو امتحانات میں شامل ہونے کے لیے بلایا گیا ہے۔ روبی بھی وشنو رائے کالج کی ہی طالب علم ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ پولیس میں بھرتی کے لیے لیے جانے والے امتحان کی تصویر ہے

واضح رہے کہ روبی اور سوربھ کا انٹرویو سامنے آنے کے بعد ہی انٹرمیڈیٹ ٹاپرز کی فہرست پر سوال اٹھائے جانے لگے تھے اور ان کی ویڈیو وائرل ہو گئی تھی۔

اس سے قبل بہار میں امتحانات میں نقل کرانے کی تصاویر بھی وائرل ہو چکی ہیں، جبکہ بہار میں نقل روکنے کے لیے طلبہ کو کھلے میدان میں چڈیوں میں امتحان لینے کی تصویر بھی وائرل ہوئی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption اپنے اپنے طلبہ کو امتحان میں نقل کرانے کی کوشش کا ایک منظر

دوسری جانب بہار سے ملحق مشرقی ریاست آسام میں 73 ایسے سکول ہیں جن میں ایک بھی طالب علم میٹرک کے امتحانات میں کامیاب نہیں ہو سکا۔

اسی بارے میں