افغان دارالحکومت کابل میں خودکش حملہ، متعدد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

افغان وزارت داخلہ کے مطابق دارالحکومت کابل میں ایک خودکش حملہ آور نے منی بس کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں کم از کم 14 افراد ہلاک اور آٹھ زخمی ہوئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق یہ خودکش حملہ کابل کے مشرق میں جلال آباد کو جانے والی مرکزی سڑک کے قریب ہوا ہے اور جس بس کو نشانہ بنایا گیا ہے اس میں غیر ملکی کمپنی کے سکیورٹی گارڈز سوار تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آور پیدل تھا اور منی بس کے انتظار میں کھڑا تھا۔

رواں سال اسلامی مہینے رمضان کے دوران کابل میں ہونے والے اس پہلے حملے کی دمہ داری طالبان کے ترجمان کی جانب سے قبول کی گئی ہے۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس سے بارت کرتے ہوئے افغان وزارت داخلہ کے ترجمان صادق صدیقی کا کہنا ہے کہ ’خودکش حملہ آور نے غیرملکی کمپنی کے سکیورٹی گارڈز کی بس کو نشانہ بنایا ہے۔ ہم اس وقت یہ معلوم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ ہلاک ہونے والوں کا تعلق کس ملک سے تھا۔‘

اس وقت حملے کی جگہ پر درجنوں ایمبولینسیں موجود ہیں۔

اس سے قبل رواں ماہ جون میں ہی افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک بم دھماکے کے نتیجے میں ایک رکنِ پارلیمان اور کم از کم تین افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

جبکہ گذشتہ اپریل میں کابل میں ہونے والے بم حملے میں64افراد ہلاک اور تین سو سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

اسی بارے میں