عام آدمی پارٹی کے 65 اراکینِ اسمبلی حراست میں

تصویر کے کاپی رائٹ FACEBOOK
Image caption منیش سیسودیا کے خلاف بھی شکایت درج کی گئی ہے

دہلی میں حکمراں جماعت عام آدمی پارٹی (آپ) کے نائب وزیر اعلی سمیت 65 اراکینِ اسمبلی کو اتورا کو حراست میں لیا گیا ہے۔

بھارتی خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق یہ افراد ریاستی اسمبلی کے رکن دنیش موہنیا کی گرفتاری کے خلاف وزیر اعظم کی رہائش کی جانب اجتجاجی ریلی لے کر جا رہے تھے۔

یہ اراکینِ اسمبلی گرفتاری دینے کے لیے وزیر اعظم کی رہائش گاہ 7 آر سی آر کی طرف جا رہے تھے جہاں حکم امتناعی نافذ ہے۔

پولیس نے نائب وزیر اعلی منیش سیسودیا سمیت عام آدمی پارٹی کے 65 ارکان اسمبلی کو تغلق روڈ کے قریب روک لیا۔

انھیں دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر حراست میں لیا گیا اور پارلیمنٹ اسٹریٹ تھانے لے جایا گیا۔

واضح رہے کہ ہفتے کو جنوبی دہلی کے علاقے سنگم وہار سے رکن اسمبلی دنیش موہنیا کو پولیس ایک پریس کانفرنس کے دوران تقریبا گھسیٹ کر لے گئی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER
Image caption حراست میں لے کر انھیں پارلیمامنٹ سٹریٹ کے تھانے لے جایا گیا ہے

ان پر تعزیرات ہند (آئی پی سی) کی دفعہ 323 (دانستہ طور پر چوٹ پہنچانے)، 341 (غلط طریقے سے رکاوٹ پیدا کرنے) اور دفعہ 34 (مشترکہ ارادے سے بہت سے لوگوں کی جانب سے کیے جانے والے عمل) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

ان پر پانی کے قلت کی شکایت کے لیے آنے والی خواتین کے ساتھ بدسلوکی اور زیادتی کا الزام ہے۔

اس کے علاوہ نائب وزیر اعلی منیش سیسودیا کے خلاف سبزی اور پھلوں کے کاروباریوں کے گروپ کی جانب سے بدسلوکی کی شکایت کی گئي ہے۔

وزیر اعلی اروند کیجریوال نے اپنے ٹویٹ میں لکھا: ’منیش سیسودیا کے خلاف کل معاملہ درج کیا گيا ہے۔ منیش آج وزیر اعظم کے سامنے 7 آر سی آر پر خود سپردگی کے لیے جا رہے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER
Image caption کیجریوال اور سیسودیا کے ٹویٹس

خیال رہے کہ دہلی کی حکمراں جماعت اور ملک کی حمکراں جماعت کے درمیان بہت سے معاملوں پر اختلاف ہے اور وزیر اعلی اروند کیجریوال اور دہلی کے لفٹیننٹ گورنر نجیب جنگ میں واضح کشیدگی نظر آتی ہے۔

اسی بارے میں