’سعودی عرب میں دس ہزار ہندوستانی فاقہ کشی پر مجبور‘

تصویر کے کاپی رائٹ

انڈیا کی وزیر خارجہ سشما سوراج نے کہا ہے کہ دس ہزار ہندوستانی شہری سعودی عرب میں کھانے کی قلت کا شکار ہیں۔

اس سے پہلے ایسی خبریں آئی تھیں کہ وہاں 800 انڈین فاقہ کشی کے دہانے پر ہیں۔

انڈین وزیر خارجہ نے ٹویٹ کے ذریعے سعودی عرب میں رہنے والے 30 لاکھ ہندوستانیوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے انڈین بھائی بہنوں کی مدد کریں۔

خیال رہے کہ خلیجی ممالک میں بڑی تعداد میں بھارتی نوکری کرتے ہیں۔ دراصل گذشتہ چند مہینوں کے دوران بین الاقوامی بازار میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کے سبب سعودی عرب اور دیگر خلیجی ممالک کو مسائل درپیش ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Noor Rahman Sheikh
Image caption گذشتہ دنوں جدہ میں 15 ہزار کلو کھانا تقسیم کیا گيا

سعودی عرب میں بہت سی کمپنیاں بند ہو گئی ہیں اور وہاں موجود کئی بھارتی بے روزگار ہو گئے ہیں یا پھر انہیں تنخواہیں نہیں ملی ہیں۔

سعودی عرب میں ملازمت کرنے والے اقبال خان نے بی بی سی ہندی کو بتایا ہے کہ ’جو بھی انڈین گھر جانا چاہ رہا ہے، اسے گھر بھی نہیں بھیجا جا رہا ہے۔‘

اقبال خان کا کہنا ہے کہ ’ہمیں سات ماہ سے تنخواہ نہیں ملی ہے جبکہ دس دنوں تک ہمیں کھانا بھی نہیں ملا تھا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’بنیادی ضروریات پوری کرنے میں بہت مشکل ہیں۔ پینے کا پانی تک دستیاب نہیں ہے، ہم نہانے کا پانی پی کر گزارا کر رہے ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ India in Jeddah
Image caption ایک شخص نے ٹویٹ کیا کہ جدہ میں گذشتہ تین دنوں سے تقریبا 800 بھارتی بھوکے پیاسے پھنسے ہوئے ہیں

اقبال خان نے مزید بتایا ہے کہ انھوں نے انڈین سفارت خانے میں اپنی مشکلات بتائی ہیں، جس کے بعد فی الحال 10 دن تک کے کھانے کا انتظام ہوا ہے۔

اقبال نے بتایا کہ جدہ میں کئی ہندوستانی اس پریشانی سے دو چار ہیں اور زیادہ تر کنسٹرکشن کے کام سے منسلک ہیں۔

گھر واپسی کے سوال پر انھوں نے کہا: ’پیسہ کمپنی کے پاس جمع ہے، اور کمپنی کا کوئی ملازم نظر بھی نہیں آ رہا ہے۔ اب کیا کریں، سمجھ میں نہیں آتا۔‘

وزیر خارجہ کے مطابق ’کسی بھی ملک کی اجتماعی کوششوں سے بڑا کچھ نہیں ہوتا۔ جدہ میں ہندوستانی قونصل خانے اور ہندوستانی شہریوں کی کوششوں سے لوگوں میں 15 ہزار کلو سے زیادہ کھانے پینے کا سامان تقسیم کیا گیا ہے۔‘

اس سے پہلے ایک شخص عمران کھوکھر نے ٹوئٹر پر وزیر خارجہ سشما سوراج کو معلومات دی تھی کہ سعودی عرب کے جدہ میں گذشتہ تین دنوں سے تقریبا 800 بھارتی بھوکے پیاسے پھنسے ہوئے ہیں۔

اس ٹویٹ کے جواب میں سشما نے کہا تھا کہ اس معاملے کو حل کرنے کے لیے وزیر مملکت وی کے سنگھ سعودی عرب جا رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption وزیر خارجہ ششما سوراج نے کہا کہ وہ سعودی عرب کے حالات پر نظر رکھےہوئے ہیں

بھارتی سفارت خانے کو بے روزگار بھارتی کارکنوں کو مفت کھانا فراہم کرنے کے لیے کہا گیا ہے۔

اس سے پہلے سشما سوراج نے ٹویٹ کیا تھا: ’میں آپ کو یقین دلاتی ہوں کہ سعودی عرب میں کوئی بھی بے روزگار بھارتی بھوکا نہیں رہے گا۔ حالات پر ہمہ وقت ہماری نظر ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ India in Jeddah
Image caption سعودی عرب میں تقریبا 30 لاکھ ہندوستانی باشندے کام کرتے ہیں

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق خلیجی ممالک سعودی عرب، بحرین، کویت، قطر، متحدہ عرب امارات اور عمان میں 60 لاکھ بھارتی کام کرتے ہیں۔

اسی بارے میں