افغانستان میں کابل سے دو غیر ملکی اغوا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption افغانستان میں شدت پسند تنظیم طالبان کے پرتشدد واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں پولیس حکام کا کہنا ہے کہ نامعلوم افراد نے دو غیر ملکی طلبا کو اغو کر لیا ہے۔

ان دونوں طلبا کو اتوار کی صبح کابل شہر سے اغوا کیا گیا۔

بی بی سی افغان سروس سے وابستہ صحافی بلال سروری کے مطابق اغوا کار افغان سکیورٹی سروسز کے یونیفارم میں ملبوس تھے۔

افغانستان میں شدت پسند تنظیم طالبان کے پرتشدد واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔

حالیہ کچھ عرصے کے دوران افغانستان سے کئی غیر ملکیوں کو اغوا کیا گیا ہے۔

رواں سال جون میں انڈیا سے تعلق رکھنے والے امدادی کارکن کو کابل سے اغوا کیا گیا تھا جبکہ اپریل میں فوج کے یونیفارم میں ملبوس مسلح افراد نے آسٹریلوی امدادی کارکن کو جلال آباد سے اغوا کیا تھا۔

گذشتہ سال جرمنی کی تعمیراتی کمپنی جی آئی زیڈ (گیز) کے دو امدادی کارکنوں کو مغوی بنایا گیا لیکن بعد میں انھیں رہا کر دیا گیا۔

رواں ہفتے کے آغاز میں افغانستان کے مغربی شہر ہیرات میں شدت پسندوں نے غیر ملکی سیاحوں کے قافلے پر حملہ کیا جس میں چھ سیاح اور اُن کا افغان ڈرائیور زخمی ہو گیا۔

غیر ملکی سیاحوں میں آٹھ کا تعلق برطانیہ، تین کا امریکہ اور ایک کا تعلق جرمنی سے تھا۔

شدت پسند تنظیم طالبان کے ترجمان نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

اسی بارے میں