انڈیا میں سیاحتی مقامات پر ’سیلفی ڈینجر زون‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption حالیہ کچھ عرصے کے دوران انڈیا میں سیاحتی مقامات پر سیلفی لیتے ہوئے کسی حادثے کا شکار ہونے کے درجنوں واقعات ہوئے ہیں

انڈیا میں مرکزی حکومت نے مختلف ریاستی حکومتوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ ایسے سیاحتی مقامات جہاں حادثات کا خطرہ ہو وہاں خطرے سے آگاہ کرنے کے لیے بورڈ نصب کریں جس ’سیلفی ڈینجر زون‘ درج ہو۔

حکومت نے یہ فیصلہ سیاحتی مقامات پر سیلفی لینے کے دوران حادثات کے باعث شرحِ اموات بڑھنے کے بعد کیا ہے۔

مرکزی حکومت نے اس سلسلے میں مختلف ریاستوں کے محکمۂ سیاحت کے سکریٹریز کو خط لکھا ہے جس میں ہدایت کی گئی ہے کہ ایسے تمام علاقے جہاں خطرہ ہو سکتا ہے کہ وہاں باقاعدہ نشاندہی کی جائے۔

وزارت سیاحت کی ایڈیشنل سکریٹری جنرل میناکشی شرما نے کہا کہ خطرے کے حامل علاقوں میں سیاحتی پولیس اور رضا کار تعینات کرنے کے ساتھ ساتھ خطرے سے آگاہ کرنے کے لیے بورڈ بھی لگائے جائیں۔

میناکشی شرما نے حکام کو ہدایات دی ہیں کہ ایسے مقامات جہاں ’ممکنہ خطرہ‘ ہے وہاں باڑ لگائیں اور ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا پر آگاہی مہم چلائی جائیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption گذشتہ سال سیلفی لینے کی کوشش میں دنیا میں ہونے والی 27 ہلاکتوں میں سے 15 انڈیا میں ہوئیں

حالیہ کچھ عرصے کے دوران انڈیا میں سیاحتی مقامات پر سیلفی لیتے ہوئے کسی حادثے کا شکار ہونے کے درجنوں واقعات ہوئے ہیں۔

وزارتِ سیاحت کے حکام کا کہنا ہے کہ انھوں نے انڈیا کے یوم آزادی کے موقع پر سکیورٹی کے انتظامات کو موثر بنانے کے لیے یہ ہدایات جاری کی ہیں۔

گذشتہ سال سیلفی لینے کی کوشش میں دنیا میں ہونے والی 27 ہلاکتوں میں سے 15 انڈیا میں ہوئیں۔

انڈیا میں ہلاک ہونے والے افراد میں جاپان کا وہ سیاح بھی شامل ہے جو تاج محل پر سیلفی لیتے ہوئے سڑھیوں سے گر کر ہلاک ہو گیا تھا۔

اسی بارے میں