بنگلہ دیش میں ٹی وی ڈرامے کی کہانی پر جھگڑا، سو زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ Star Jalsha
Image caption کرن مالا بنگلہ دیش میں بہت مقبول ہے جس میں ایک جنگجو شہزادی کی کہانی دکھائی گئی ہے جو انسانیت کو برائی سے بچاتی ہے

بنگلہ دیش میں پولیس کو ایک ٹیلی ویژن ڈرامے کی کہانی پر ہونے والے ہنگامے کو قابو میں کرنے کے لیے آنسو گیس اور ربڑ کی گولیوں کا استعمال کرنا پڑا۔

بنگلہ دیش کے مشرقی حصے میں واقع ہابی گنج نامی گاؤں میں لوگ ایک چائے کے ہوٹل پر ڈرامے ’کرن مالا‘ کی آخری قسط دیکھنے کے لیے جمع تھے کہ ان کے درمیان ڈرامے کی کہانی سے متعلق اختلاف پیدا ہو گیا۔

آس پاس بیٹھے ہوئے لوگوں بھی اس بحث میں حصہ لینا شروع کر دیا اور پھر نوبت یہاں تک پہنچی کہ سینکڑوں لوگوں نے ڈنڈے اور چھڑیاں اٹھا لیں اور باقاعدہ جنگ کا سا سماں پیدا ہو گیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی نے پولیس حکام کے حوالے سے بتایا کہ ڈرامے پر شروع ہونے والے اس جھگڑے کے نتیجے میں ایک سو سے زائد افراد زخمی ہو گئے ہیں۔

مقامی پولیس سربراہ یاسین الحق نے اے ایف پی کو بتایا کہ ابتدا میں دو افراد کے درمیان ڈرامے کی ایک قسط پر جھگڑا شروع ہوا اور بعد میں یہ دھڑوں کے درمیان تصادم میں تبدیل ہو گیا۔

پولیس افسر کے مطابق مشتعل ہجوم نے ریستوران میں توڑ پھوڑ کی اور یہ جھگڑا جمعرات کی صبح تک جاری رہا۔

کرن مالا بنگلہ دیش میں بہت مقبول ہے جس میں ایک جنگجو شہزادی کی کہانی دکھائی گئی ہے جو انسانیت کو برائی سے بچاتی ہے۔

گذشتہ برس تین لڑکیوں کی خودکشی کو بھی اس ڈرامے سے منسوب کیا گیا تھا جس میں اطلاعات کے مطابق لڑکیوں نے والدین کی جانب ڈرامے کے مرکزی کردار شہزادی جیسا لباس خریدنے سے انکار پر خودکشی کر لی تھی۔

اسی بارے میں