BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Thursday, 26 October, 2006, 02:32 GMT 07:32 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
ارجنٹینا کا ایران، حزب اللہ پر الزام
 
ارجنٹینا
حملے میں پچاسی یہودی ہلاک ہوئے تھے
ارجنٹینا میں بارہ سال پہلے یہودیوں کے ایک ثقافتی مرکز پر بم حملے کے سلسلے میں استغاثہ کے محکمے نے ایران اور حزب اللہ پر باضابطہ فرد جرم لگا دی ہے۔ اس حملے میں پچاسی افراد ہلاک اور بہت سے زخمی ہوئے تھے۔

ایک سال کی تفتیش کے بعد وکیل استغاثہ البرٹو نسمان نے کہا کہ حملے کا انتظام اس وقت کی ایرانی حکومت نے کیا تھا اور حزب اللہ نے اس پر عمل کیا تھا۔

ارجنٹینا نے 1994 کی ایرانی حکومت کے اہلکاروں کی گرفتاری کے بین الاقوامی وارنٹ جاری کرنے کے لیے کہا ہے جس میں اس وقت کے صدر علی ہاشمی رفسنجانی بھی ہیں۔

نامہ نگاروں کا کہنا ہے کہ متاثرین کے خاندان والے اور ارجنٹینا کے عوام سابق حکومتوں کی طرف سے اس معاملے کی تحقیقات کرانے میں زیادہ دلچسپی نہ رکھنے پر ناراض ہیں۔

ارجنٹینا میں لاطینی امریکہ کی سب سے بڑی یہودی برادری رہتی ہے۔

ایران نے ہمیشہ حملے میں شمولیت کے الزام کی تردید کی ہے۔

گزشتہ نومبر ارجنٹینا کے ایک پراسیکیوٹر نے کہا تھا کہ حزب اللہ کے ایک رکن کا حملے میں ہاتھ تھا اور اس کی شناخت ایف بی آئی اور ارجنٹینا کی انٹیلیجنس کے ایک مشترکہ آپریشن میں کی گئی ہے۔ تاہم حزب اللہ کا کہنا ہے کہ وہ شخص جس کا نام ابراہیم حسین بیرو بتایا گیا تھا جنوبی لبنان میں اسرائیل کے ساتھ ایک لڑائی میں مارا جا چکا ہے۔

 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد