BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Wednesday, 06 August, 2008, 10:38 GMT 15:38 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
’چین اظہار رائے کی آزادی کو فروغ دے‘
 
بش کوریا
امریکی صدر شمالی کوریا کے صدر کے ساتھ
امریکی صدر جارج بش نے چین سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ملک میں مذہب اور اظہار رائے کی آزادی کو مزید فروغ دے۔

یہ بات انہوں نے جنوبی کوریا میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہی۔ امریکی صدر اولمپک میں شرکت کے لیے بیجنگ روانگی سے قبل کوریا کے دورے پر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اولمپک سے قبل چین نے اختلاف رائے رکھنے والوں کے خلاف جو کارروائی کی ہے وہ ایک غلطی ہے۔

’میں چینی حکام سے ساڑھے سات سال سے مل رہا ہوں اور میرا پیغام ایک ہی ہے کہ معاشرے میں مذہبی لوگوں سے نہ گھبرائیں۔ اور اصل بات یہ ہے کہ مذہبی افراد معاشرے کو بہتر بنائیں گے۔‘

امریکی صدرر پر دباؤ تھا کہ وہ اولمپک کی تقریب میں شرکت نہ کریں تاہم صدر بش کا کہنا ہے ’میں کھیلوں کی تقریب میں چینی عوام کے احترام اور امریکی کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کرنے کے لیے جا رہا ہوں۔‘

کوریا کے صدر کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے صدر بش نے فوجی روابط مزید مضبوط کرنے کا کہا اور شمالی کوریا کا ایٹمی پروگرام ختم کرنے کی پیش رفت کا خیر مقدم کیا۔

 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد