BBCUrdu.com
  •    تکنيکي مدد
 
پاکستان
انڈیا
آس پاس
کھیل
نیٹ سائنس
فن فنکار
ویڈیو، تصاویر
آپ کی آواز
قلم اور کالم
منظرنامہ
ریڈیو
پروگرام
فریکوئنسی
ہمارے پارٹنر
آر ایس ایس کیا ہے
آر ایس ایس کیا ہے
ہندی
فارسی
پشتو
عربی
بنگالی
انگریزی ۔ جنوبی ایشیا
دیگر زبانیں
 
وقتِ اشاعت: Tuesday, 16 December, 2008, 08:12 GMT 13:12 PST
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
جوتے اٹھا کر مظاہرہ کرنے کا اعلان
 

 
 
عراق میں منتظرالزیدی کی رہائی کے لیے مظاہرے ہو رہے ہیں۔
امریکہ میں جنگ مخالف تنظیموں نےصدر بش پر جوتا پھینکے والےعراقی صحافی سے یکجہتی کے اظہار کے طور پر وائٹ ہاؤس کے سامنے جوتے اٹھا کرمظاہرہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

تین جنگ مخالف تنظیموں ’آفٹر ڈاؤننگ سٹریٹ،‘ ’ویمن فار پیس‘ اور ’پنک کوڈ‘ کی طرف سے جاری ہونے والے مشترکہ بیان میں کہا گيا ہے کہ بدھ، سترہ دسمبر کو وائٹ ہاؤس کے سامنے مظاہرہ کیا جائےگا جس میں شرکاء پرانے جوتوں کی بوریاں بھر کر لائیں گے-

بیان میں کہا گیا ہے کہ بش انتظامیہ کی طرف سے عراق میں غیر قانونی مداخلت، عراق میں مارے جانیوالے امریکی اور عراقی فوجیوں کی طرف سے جوتوں کی بوریاں لے کر مظاہرین وائٹ ہاؤس کے سامنے جمع ہوں گے۔

جنگ مخالف تنظیموں نے عراقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بغداد میں صدر بش پر جوتے پھینکنے والے عراقی صحافی منتظر الزیدی کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔ تنظیم کے اراکان نے کہا ہے کہ عراقی صحافی کے اہل خانہ کی مالی مدد کے لیےایک فنڈ بھی قائم کیا جائے گا۔

تنظیم ’پنک کوڈ‘ کی میڈا بینجامن نے کہا ہے کہ یہ بہت قابل اشتعال بات ہے کہ عراقی صحافی منتظر الزیدی جارج بش کی بےعزتی کرنے پر دو سال تک کی سزا پا سکتا ہے جبکہ پندرہ لاکھ عراقیوں، چار ہزار دو سو امریکی فوجیوں کی ہلاکتوں اور لاکھوں عراقیوں کی ملک بدری کے ذمہ دار جارج بش کھلے گھوم رہے ہیں۔

صحافی کےخاندان کی مالی مدد
  جنگ مخالف تنظیموں نے عراقی صحافی کے اہل خانہ کی مالی مدد کے لیےایک فنڈ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے
 
جنگ مخالف تنظیم

پنک کوڈ کی میڈا بینجامن نے کہا کہ صدر بش کو جنگی جرائم کے ارتکاب میں جیل میں ہونا چاہیے تھا-

بیان میں کہاگيا ہے کہ جنگ مخالف کارکنوں کی طرف سے وائٹ ہاؤس کے سامنے جوتا مظاہرے میں عراق جنگ میں شریک رہنے والے سابق امریکی فوجی بھی شرکت کریں گے-

اس مظاہرے کو جنگ مخالف تنظیموں نے ’جوتے برائے بش‘ ریلی کا نا م دیا ہے-

 
 
بش پر حملہ
جوتے پھینکے جانے پر پاکستانی صحافی کیا کہتے ہیں
 
 
گرٹروڈ بیل عراق کی ’آزادی‘
خاتون نے عراق میں یہ سب پہلے بھی دیکھا
 
 
اسی بارے میں
تازہ ترین خبریں
 
 
یہ صفحہ دوست کو ای میل کیجیئے   پرِنٹ کریں
 

واپس اوپر
Copyright BBC
نیٹ سائنس کھیل آس پاس انڈیاپاکستان صفحہِ اول
 
منظرنامہ قلم اور کالم آپ کی آواز ویڈیو، تصاویر
 
BBC Languages >> | BBC World Service >> | BBC Weather >> | BBC Sport >> | BBC News >>  
پرائیویسی ہمارے بارے میں ہمیں لکھیئے تکنیکی مدد