76 فیصد متاثرہ خاندان پناہ گاہوں سے محروم

اقوامِ متحدہ کے رابطہ کاری کے ادارے اوچا کا کہنا ہے کہ پاکستان کے صوبہ سندھ اور بلوچستان میں دو ماہ قبل آنے والے سیلاب سے متاثرہ چھہتر فیصد خاندان، تاحال موزوں پناہ گاہوں سے محروم ہیں۔

اوچا کی تازہ رپورٹ کے مطابق اب جبکہ موسمِ سرما شروع ہونے والا ہے ایسے متاثرین کے لیے، خیموں کی اشد ضرورت ہے۔

ادارے کے مطابق موسم میں تبدیلی کی وجہ سے صوبہ سندھ اور بلوچستان کے بارشوں اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں بیماریوں کی شکایات میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔

ادارے کا کہنا ہے کہ گزشتہ ہفتے کے دوران متاثرہ علاقوں میں اسہال، ملیریا، ڈینگی اور جلد اور سانس کی بیماریوں کی سوا چار لاکھ شکایات سامنے آئیں۔

اقوامِ متحدہ نے یہ بھی کہا ہے کہ سندھ اور بلوچستان میں متاثرین کی خوراک کے لیے،کی گئی امدادی اپیل کی محض اٹھارہ فیصد رقم وصول ہوئی ہے اور اہداف پورے کرنے کے لیے چودہ کروڑ ڈالر سے زائد کی مزید امدادی رقم درکار ہے۔