مدفون شخص کی لاش مردہ خانے سے برآمد

ایک برطانوی شہری کی لاش مردہ خانے سے تیرہ سال بعد برآمد ہوئی ہے۔

سیاہ نسل سے تعلق رکھنے والے کرسٹوفر ایلڈر سنہ انیس سو اٹھانوے میں پولیس کی حراست کے دوران ہل شہر میں ہلاک ہوگئے تھے اور انہیں مردہ خانے کے ریکارڈ کے مطابق مقامی قبرستان میں دفن کردیا گیا تھا۔ تاہم آنجہانی کی ہمشیرہ کو شک تھا کہ ان کے بھائی کی جگہ کسی خاتون کو دفن کیا گیا ہے۔

تیرہ سال بعد مردہ خانے میں ان کی لاش ملنے کے بعد ان کے اہلِ خانہ کو آگاہ کیا گیا ہے۔ ہل شہر کی انتظامیہ نے اس واقعہ کو افسوسناک قرار دیا ہے اور یقین دہانی کرائی ہے کہ اس کی مکمل چھان بین کی جائیں گی۔