افغانستان: دستاویزی فلم کا اجراء روک دیا گیا

یورپی یونین نے افغانستان کی جیلوں میں اخلاقی جرائم کے مقدمات میں قید خواتین پر بنائی گئی ایک دستاویزی فلم کا اجراء روک دیا ہے۔

یورپی یونین کے مطابق اس نے ایسا ان قیدی خواتین کے تحفظ کے لیے کیا ہے جو اس فلم میں دکھائی گئی ہیں۔

افغانستان میں جبری شادیوں یا شوہروں کے تشدد کی وجہ سے گھروں سے فرار ہونا بھی اخلاقی جرائم میں شامل ہے۔ اس فلم میں ایک ایسی عورت بھی دکھائی گئی ہے جس کے ساتھ مبینہ طور پر جنسی زیادتی ہوئی اور پھر اسے زنا کے الزام میں جیل میں بند کردیا گیا۔