جرمنی:بم ناکارہ بنانے کے لیے آدھا شہر خالی

جرمنی میں حکام کوبلینز نامی شہر سے تقریباً چالیس ہزار شہریوں کو منتقل کرنے کی کوشش کرہے ہیں۔

ایسا اس لیے کیا جا رہا ہے کیوں کہ ماہرین دریائے رائن میں دریافت ہونے والے دوسری جنگِ عظیم کے ایک بم کو ناکارہ بنائیں گے۔

لگ بھگ آدھا شہر جس میں دو ہسپتالوں میں موجود لوگ، سات جیلیں اور ادارے بھی شامل ہیں محفوظ فاصلے پر منتقل کیے جائں گے۔

بم کو ناکارہ بنانے کا کام اتوار کو کیا جانا ہے۔ یہ برطانوی بم’ بلک بسٹر‘ کے نام سے جانا جاتا ہے کیونکہ یہ کسی شہر کا ایک بڑا حصہ تباہ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔