پاکستانی شہری کی رہائی کا حکم

لندن میں اپیل عدالت نے برطانوی حکومت کو ایک ایسے پاکستانی شخص کو رہا کرنے کا حکم دیا ہے جو آٹھ سال سے بغیر کسی الزام کا سامنے کیے حراست میں ہے۔

یونس رحمت اللہ نامی اس شخص کو برطانوی فوج نے سنہ 2004 میں عراق میں پکڑا تھا۔

بعد ازاں انہیں امریکیوں کے حوالے کر دیا گیا جنہوں نے انہیں افغانستان منتقل کر دیا اور تاحال وہ وہیں قید ہیں۔

اگرچہ امریکہ اس فیصلے پر عمل کرنے کا پابند نہیں ہے لیکن پھر بھی حقوقِ انسانی کے وکلاء کے برطانوی عدالت کے فیصلے کو تاریخی کامیابی قرار دیا ہے۔

برطانوی اور امریکی حکومت کا کہنا ہے کہ وہ اپنے اگلے قدم کے بارے میں غور کر رہے ہیں۔