’تحقیق شائع کرنا خطرناک ہو سکتا ہے‘

امریکی حکومت نے دو سائنسی جریدوں سے کہا ہے کہ برڈ فلو وائرس کی ایک مہلک قسم کی تیاری کے حوالے سے کی گئی تحقیق شائع نہ کریں۔

سائنسی جریدے سائنس اور نیچر سوائن فلو کے حوالے سے ڈچ لیبارٹری میں کی گئی تحقیق کو شائع کرنے والے ہیں۔

اس لیبارٹری میں سوائن فلو وائرس ایچ فائیو این ون کی جان لیوا یا مہلک قسم تیار کی گئی ہے۔

امریکی حکومت کی کمیٹی نیشنل سائنس برائے حیاتیاتی سکیورٹی نے اس خدشے کا اظہار کیا ہے کہ وائرس سے متعلق معلومات کو حیاتیاتی ہتھیاروں کی تیاری میں استعمال کیا جا سکتا ہے۔

اس کمیٹی نے برڈ فلو سے متعلق تحقیق کی عام معلومات کو شائع کی منظوری دی ہے جن کے تحت سائنسدان کو اس وائرس کے قدرتی طور پر پھیلاؤ کے بارے میں معلومات حاصل کرنے اور اس کے روک تھام کا طریقہ دریافت کرنے میں مدد ملے گی۔