میمو معاملہ:درخواستیں قابلِ سماعت قرار

پاکستان کی سپریم کورٹ نے متنازع میمو کے بارے میں آئینی درخواستوں کو قابلِ سماعت قرار دیتے ہوئے اس معاملے کی سماعت کے لیے ایک جوڈیشل کمیشن تشکیل دے دیا ہے۔

جمعہ کو سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی سربراہی میں قائم بینچ نے متنازع مییمو سے متعلق دائر درخواستوں پر مختصر فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ ڈی جی آئی ایس آئی، وفاق اور بری فوج کے سربراہ جنرل کیانی نے میمو کے وجود سے انکار نہیں کیا ہے۔

خیال رہے کہ یہ آئینی درخواستیں پاکستان میں حزب اختلاف کی سب سے بڑی جماعت مسلم لیگ نواز کے سربراہ میاں نواز شریف سمیت نو مدعیان الیہ کی جانب سے دائر کی گئی تھیں جن میں عدالت سے اس معاملے کی فوری سماعت کے لیے استدعا کی گئی تھی۔

عدالت میں میاں نواز شریف کی طرف سے دائر کی جانے والی اس درخواست میں کہا گیا ہے کہ اُن کی طرف سے پُرزور مطالبے کے باوجود مجاز اتھارٹی نے نہ تو اس میمو سے متعلق کوئی تحقیقات شروع کیں اور نہ ہی کوئی آزاد اور خود مختار کمیشن تشکیل دیا جو اس واقعہ کی تحقیقات کرسکے۔