امریکی سینٹروں کا حقانی سے برتاؤ پر تشویش

تین امریکی سینٹروں نے امریکہ میں پاکستان کے سابق سفیر حسین حقانی کے ساتھ متنازع میمو کے حوالے سے جاری تحقیقات کے دوران روا رکھے جانے والے برتاؤ پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

امریکی ریپلیکن سینٹر جان مکین ، مارک کرک اور آزاد سینٹر جو لائبرمن نے ایک بیان میں اس خدشے کا اظہار کہ کہیں حسین حقانی کو ’سیاسی انتقام کا ذریعہ‘ نہ بنا لیا جائے۔

امریکی سینٹروں نے اپنے بیان میں کہا کہ حسین حقانی نے اپنے دور میں پاکستان کی باعزت انداز میں نمائندگی کی اور وہ جب سے پاکستان گئے ہیں ان پر مختلف پابندیاں عائد کی جا رہی ہیں۔

امریکی سینٹروں نے پاکستانی حکام سے مطالبہ کیا کہ سویلین قوانین کے تحت حسین حقانی کے معاملے کو جلد حل نکالا جائے۔