’آئین کی تشریح دوسروں کو نہ کرنی پڑے‘

پاکستان کے وزیرِ اعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ وہ قائد حزبِ اختلاف اور اپوزیشن جماعتوں کو دعوت دیتے ہیں کہ ایسا آئین بنائیں جس کی تشریح دوسروں کو نہ کرنا پڑے۔

وزیراعظم گیلانی نے جمعہ کو پارلیمنٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’اگر آپ اور قوم حکومت کو پانچ سال تک برداشت نہیں کر سکتے تو آئینی قرارداد کے ذریعے اس کی مدت کم کردیں۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ’یہاں ایک سو تین ترامیم ہو چکی ہیں، یہ تو کوئی مسئلہ نہیں ہے۔‘

وزیرِ اعظم کا کہنا تھا کہ ’ہم لوگ تو آتے جاتے رہتے ہیں لیکن ادارے قائم رہتے ہیں۔‘

انہوں نے کہا کہ جہاں تک ان کے اعتماد کا ووٹ لینے کی بات ہے تو پارلیمان نے متفقّہ طور پر منتخب کیا ہے۔

پاکستان کے وزیرِ اعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ ’حزبِ اختلاف کو شاید یہ غلط فہمی ہےکہ ہم این آر او یا فوج سے بچنے کے لیے اسمبلی میں آئے ہیں۔‘

انہوں نے کہا کہ وہ شہید ہونے یا اداروں کے ٹکراؤں کے لیے بھی اسمبلی میں نہیں آئے۔