بیسویں ترمیم کا بل قومی اسمبلی میں پیش

پاکستان کی وفاقی حکومت نے آئین میں بیسویں ترمیم کا بل قومی اسمبلی میں پیش کر دیا ہے۔

بدھ کو اسمبلی میں پیش کردہ اس بل کا مقصد ضمنی انتخابات کے بارے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے قانونی تقاضے کو پورا کرنا ہے۔

آئین میں بیسویں ترمیم کا بل پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے پیش کیا جو سپیکر نے مزید کارروائی کے لیے وزارتِ قانون کی متعلقہ قائمہ کمیٹی کے سپرد کرنے کا حکم دیا ہے۔

حکومت کے مطابق اس بل کا مقصد الیکشن کمیشن کے اراکین کی غیر موجودگی میں چیئرمین الیکشن کمیشن نے جو ضمنی انتخابات کروائے تھے انھیں قانونی تحفظ فراہم کرنا ہے۔

سپریم کورٹ نے سنہ دو ہزار ایک کی آئینی درخواست نمبر اکتیس کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ نامکمل الیکشن کمیشن نے جو ضمنی انتخابات کروائے تھے ان کی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

بدھ کو پیش کردہ آئینی ترمیمی بل کا اطلاق انیس اپریل سنہ دو ہزار دس سے ہو گا تاکہ اس عرصے کے دوران کروائے گئے ضمنی الیکشن کا قانونی حیثیت دی جا سکے۔