ہلاکتوں کی عدالتی تحقیقات کا اعلان

پنجاب کی حکومت نے سرکاری ہسپتال میں ملنے والی مفت ادویات کے استعمال سے ہونے والی اموات کا سراغ لگانے اور ذمہ دار افراد کے تعین کے لیے عدالتی تحقیقات کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیر اعلیْ پنجاب نے ان ہلاکتوں پر صوبائی سیکرٹری صحت اور پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے سربراہ کو ان کے عہدوں سے ہٹ کر او ایس ڈی بنادیا ہے ۔

لاہور سے بی بی سی کے نامہ نگار عبادالحق کےمطابق وزیر اعلیْ شہباز شریف نے اعلان کیا ہے کہ ادویات سے ہونے والی ہلاکتوں پر صوبے کی اعلی عدلیہ سے جوڈیشل انکوائری کرائی جائے گی اور اس مقصد کے لیے لاہور ہائی کورٹ کو درخواست دی جائے گی۔