شام میں نئے آئین پر ریفرنڈم

شام کی حکومت آج ملک میں نئے آئین سے متعلق ایک ریفرنڈم کروا رہی ہے۔

حزب مخالف نے اس ریفرنڈم کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا ہے اور صدر الاسد سے فوری طور پر اقتدار چھوڑنے کا مطالبہ کیا ہے۔

نئے آئین کے تحت تین ماہ میں کثیر الجماعتی پارلیمانی انتخابات کا انعقاد کردیا جائے گا۔

دوسری جانب شام میں فسادات اور حکومت مخالف احتجاج کا سلسلہ جاری ہے جہاں کچھ اطلاعات کے مطابق سنیچر کے روز اسّی افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

حکومت نے فسادات کے واقعات کے باوجود ریفرینڈم کو آگے بڑھاتے ہوئے تقریباً ڈیڑھ کروڑ ووٹروں کے لیے تیرہ ہزار پولنگ سٹیشن قائم کیے ہیں۔

ریاستی ٹی وی آئین کی اس دستاویز کے بارے میں لوگوں کو آگاہ کرنے کے لیے مباحثوں کا انعقاد کرتا رہا ہے۔