ڈاکٹر غلام نبی فائی کو دو سال قید کی سزا

امریکہ کی عدالت نے کشمیری نژاد امریکی شہری ڈاکٹر غلام نبی فائی کو دو سال قید کی سزا سنائی ہے۔

اُن پر پاکستان کے خفیہ ادارے آئی ایس آئی سے غیر قانونی طریقے سے رقوم وصول کرنے کا الزام تھا جس کا انہوں نے امریکی عدالت کے سامنے اعتراف بھی کیا۔

ڈاکٹر فائی امریکہ میں کشمیری امریکن کونسل نامی ادارے کے سربراہ تھے جب انہیں گزشتہ سال جولائی میں گرفتار کیا گیا۔

استغاثہ کے مطابق انہوں نے آئی ایس آئی سے کوئی چالیس لاکھ ڈالر کی رقوم وصول کیں اور اُن کے متعلق امریکی حکام کے سامنے غلط بیانی کی۔

استغاثہ کا کہنا تھا کہ ائی ایس آئی، ڈاکٹر فائی کے ذریعے مسئلۂ کشمیر کے بارے میں امریکی پالیسی پر اثرانداز ہونا چاہتی تھی جس کے لیے انہیں رقوم ادا کی گئیں۔

سزا کے بعد امریکی ریاست ورجینیا میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر غلام نبی فائی نے کہا کہ اُنہوں نے کشمیر کی آزادی کے مقصد کی خاطر قربانی دی ہے۔ اُن کی وکیل کے مطابق عدالت نے ڈاکٹر فائی کو سخت سزا سنائی ہے البتہ وہ اسے تسلیم کرتے ہیں۔