’خفیہ ایجنسی کے اہلکاروں کے لیے نیا ضابط اخلاق‘

امریکہ کا خفیہ ادارہ اپنے اہلکاروں کے لیے نیا ضابطہ اخلاق جاری کر رہا ہے۔

یہ اقدام ان الزامات کے سامنے آنے کے بعد کیا جارہا ہے کہ امریکی خفیہ ایجنسی کے اہلکاروں نے دو ہفتے پہلے صدر باراک اوباما کے کولمبیا کے دورے کے دوران وہاں کی طوائفوں کے ساتھ صحبت کی۔

اب تک آٹھ خفیہ ایجنٹوں کو ان الزامات کے تحت برطرف کیا جا چکا ہے۔

یہ بھی اطلاعات ہیں کہ ان ایجنٹوں نے پچھلے سال بھی ایل سیلواڈور میں برہنہ رقص کرنے والی خواتین اور طوائفوں کو پیسے دیے۔

امریکی خفیہ ایجنسی کے نئے ضابطہ اخلاق کے تحت خفیہ اہلکاروں پر ایسی جگہوں پر جانے کی اجازت نہیں ہوگی جن کی شہرت اچھی نہیں اور نہ ہی وہ غیر ملکیوں کو ہوٹل میں اپنے کمروں میں لے جا سکیں گے۔

اس کے علاوہ ان کی ڈیوٹی شروع ہونے سے دس گھنٹے پہلے تک ان کی شراب نوشی بھی بند ہوگی۔