غیرقانونی پناہ گزینوں کو حتمی تنبیہ

صوبہ خیبر پختونخواہ کے دارالحکومت پشاور میں حکومت نے غیر قانونی طور پر رہائش پزید افغان پناہ گزینوں سے کہا ہے کہ وہ پچیس مئی سے پہلے واپس اپنے وطن چلے جائیں۔

ادھر پشاور شہر میں باہر سے آکر آباد ہونے والے تمام افراد کی تھانے میں رجسٹریشن کو ضروری قرار دے دیا گیا ہے۔

حکومتی اعلان میں کہا گیا ہے کہ تمام غیر قانونی طور پر رہائش پزید افغان پناہ گزینوں کے خلاف پچیس مئی کے بعد سے سخت قانونی کارروائی کی جا سکتی ہے۔

جائنٹ سکریٹری سیفران ڈاکٹر عمران زیب نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ اعلان ان غیر قانونی طور پر رہائش پذیر افغان پناہ گزینوں کے لیے ہے جبکہ قانونی طور پر رہائش پذیر افغان پناہ گزین اس سال تیس دسمبر تک رہ سکتے ہیں جس کے بعد ان کے مستقبل کے حوالے سےحکومت پاکستان کوئی فیصلہ کرے گی۔