مصر کی فوج کی صدر کو ’تنبیہ‘

مصر کی آئینی عدالت کی جانب سے صدر مرسی کے پارلیمان کی بحالی کے صدارتی فرمان کو مسترد کیے جانے کے بعد ملک کی طاقتور فوجی کونسل کا کہنا ہے کہ ہر صورت میں ملک کے آئین کا دفاع اور احترام کیا جانا چاہیے۔

فوجی کونسل کی جانب سے پیر کو جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ اس نے پارلیمان کو تحلیل کر کے ملک کی آئینی عدالت کے فیصلے پر عملدرآمد کیا تھا اور ہر کسی کو اس فیصلے کو تسلیم کرنا چاہیے۔

فوج کا کہنا ہے کہ اسے یقین ہے کہ تمام ریاستی ادارے آئین و قانون کا احترام کریں گے۔

اس بیان کو صدر مرسی کے لیے فوج کی جانب سے تنبیہ اور ایک چیلینج کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ قاہرہ میں بی بی سی کے نامہ نگار جان لین کے مطابق بظاہر مصر میں سیاسی سمجھوتہ اپنے اختتام کو پہنچ چکا ہے۔