ایران سے کوئی کاروباری روابط نہیں: سیمنز

آخری وقت اشاعت:  اتوار 23 ستمبر 2012 ,‭ 11:24 GMT 16:24 PST

جرمنی کی انجنئیرنگ کمپنی ’سیمنز‘ نے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ کمپنی نے ایران کے جوہری پروگرام کے لیے بیچے گئے آلات میں دھماکہ خیر مواد چھپا رکھا تھا۔

سیمنز کا کہنا ہے کہ ان کے ایران کے ساتھ کسی قسم کے کاروباری روابط نہیں۔

اس سے پہلے ایران کے ایک رکنِ پارلیمان کا کہنا تھا کہ یہ مواد پھٹنے سے پہلے ہی دریافت کر لیا گیا۔

ایران پر اقوام متحدہ کی جانب پابندیاں عائد ہیں۔ رکنِ پارلیمان نے یہ واضح نہیں کیا کہ یہ آلات کہاں سے لائے گئے ہیں۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔