صحرائےسینا:تین مصری سکیورٹی اہلکار ہلاک

آخری وقت اشاعت:  اتوار 4 نومبر 2012 ,‭ 00:46 GMT 05:46 PST

مصر کے علاقے شمالي صحرائے سينا میں اسلامی شدت پسندوں کے ايک حملے میں دو پوليس اہلکار اور ايک فوجي ہلاک ہوگيا ہے۔ اطلاعات کے مطابق شمالي صحرائے سينائے کے شہر العریش میں حملہ آور سکيورٹی اہلکاروں کو ہلاک کرنے کے بعد وہاں سے فرار ہو گئے۔

گزشتہ کچھ ماہ میں صحرائے سینا میں مصری پولیس کی چوکیوں پر مسلسل حملے ہو رہے ہیں جن میں اب تک درجنوں سکیورٹی اہلکار ہو چکے ہیں۔

صدر حسني مبارک کی اقتدار سے عليحدگي کے بعد جزيرہ نما صحرائے سينا میں حالات کشيدہ ہیں۔ مصری حکومت کا کہنا ہے کہ اسلامي شدت پسندوں نے سکيورٹي اہلکاروں پر حملے شروع کر رکھے ہیں۔

مصر کے نئے صدر محمد مرسي نے اقتدار سنھبالنے کے بعد اس بات کا اعادہ کيا تھا کہ وہ جزيرہ نما صحرائے سينا میں امن و امان کي صورتحال کو بحال کريں گے اور شدت پسندوں کے خلاف کارروائي کا حکم ديا تھا۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔