اجمل قصاب کو پھانسی دے دی گئی

آخری وقت اشاعت:  بدھ 21 نومبر 2012 ,‭ 02:58 GMT 07:58 PST

چھبیس نومبر 2008 کو ممبئی پر حملے میں زندہ بچ جانے والے واحد ملزم کو بھارت کے وقت کے مطابق صبح ساڑھے سات بجے نئی دہلی میں پھانسی دے دی گئی ہے۔

اجمل قصاب دس حملہ آوروں کے گروپ کا حصہ تھے جنھوں نے بھارت کے تجارتی مرکز پر منظم حملہ کیا تھا۔ ان کے باقی ساتھی پولیس کے ہاتھوں مارے گئے تھے لیکن قصاب کو حملے کے دوران زندہ پکڑ لیا گیا تھا۔

انھیں ایک مقدمے میں ممبئی کی ایک ذیلی عدالت نے موت کی سزا سنائی تھی۔ اس سال ستمبر میں اجمل قصاب نے اپنی موت کی سزا معاف کرنے کے لیے بھارتی صدر پرنب مکھرجی سے رحم کی اپیل کی تھی جو مسترد کر دی گئی تھی۔اس سے پہلے بھارتی سپریم کورٹ نے بھی ان کی موت کی سزا کو برقرار رکھا تھا۔

قصاب کا تعلق پاکستان سے ہے۔ انھوں نے اپنے دیگرساتھیوں کے ہمراہ ممبئی کے ریلوے سٹیشن، تاج ہوٹل، اوبرائے ہوٹل، ناریمن ہاؤس اور لیوپولڈ کیفے پر ایک ساتھ حملہ کیا تھا۔ اس میں متعدد غیر ملکیوں سمیت 166 افراد ہلاک اور 238 زخمی ہو گئے تھے۔

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔